علاقائی

کراچی:محکمہ تعلیم سندھ نے تعلیم پروگرام کے تحت صوبے میں تعلیمی معیار کو بہتر بنانے کے لئے پروگرام شروع کیا ہے، پیر مظہرالحق

کراچی ﴿نامہ نگار﴾ سینئر صوبائی وزیر تعلیم وخواندگی پیر مظہرالحق نے کہا ہے کہ محکمہ تعلیم سندھ نے سندھ بنیادی تعلیم پروگرام کے تحت صوبے میں تعلیمی معیار کو بہتر بنانے اور عمارتوں کے بنیادی انفرا اسٹرکچر کو مزید بہتر کرنے کے لئے پروگرام شروع کیا ہے اس منصوبے کے تحت سیلاب سے متاثرہ اسکولز کی بحالی، ان کو بہتر بنانا، اپ گریڈیشن کرنا، تیکنیکی سہولت، اسکولز کا الحاق اور اساتذہ کی صلاحیتوں میں اضافہ شامل ہیں، اس منصوبے پر 5 سالوں کے دوران 155 ملین ڈالرز خرچ ہوں گے۔ یہ بات بدھ کو انہوں نے اپنے دفتر میں مشن ڈائریکٹر یو ایس ایڈ ڈاکٹر اینڈریو کی سربراہی میں ملنے والے ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نی کہا کہ سیکھنے کے مواقع کے ایک منصوبے کے تحت 100 ملین بچوں کو 2015 تک سیکھنے کی بنیادی مہارت مہیا کی جائے گی۔ صوبائی وزیر تعلیم نے کہا کہ تعلیم کے فروغ سے معاشرے میں منفی رجحانات کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے اور موجودہ جمہوری حکومت کی مفاہمتی پالیسی کے نتیجے میں یہ بات ممکن ہوئی ہے کہ صوبے میں تعلیم کے فروغ کے لئے بڑے پیمانے پر کام ہوا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے معاملات کو صحیح رخ پر ڈھالا ہے اور مزید بہتری لانے کے لئے سخت محنت کی ضرورت ہے انہوں نے صوبہ سندھ میں تعلیم کے فروغ میں یو ایس ایڈ کے کردار کی بے حد تعریف کی اور کہا کہ پاکستان اور امریکا دونوں ممالک کو دہشت گردی اور انتہا پسندی کے رجحانات کا سامنا ہے اور تعلیم کے فروغ سے انتہا پسندی کے جذبات کا خاتمہ ممکن ہے۔ انہوں نی کہا کہ تعلیم کے شعبے میں اصلاحات نافذ کردی گئی ہیں اور اس کے اثرات سامنے آرہے ہیں۔ اس موقع پر یو ایس ایڈ کے وفد نے وزیر تعلیم کو بتایا کہ یو ایس ایڈ نے سندھ میں تعلیم کے فروغ کے لئے خیرپور، دادو، جیکب آباد، قمبر، سکھر، لاڑکانہ اور کراچی کے اضلاع میں سرگرم عمل ہے اس موقع پر ڈاکٹر رینڈی، ذوالفقار علی اور پرویز بھی موجود تھے۔

یہ بھی پڑھیں  صحافی طارق شاہین کے سسرکی وفات پر پریس کلب بھائی پھیرو،اور سرائے مغل کا مشترکہ تعزیتی ریفرنس اوردعائے مغفرت

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker