پاکستانتازہ ترین

وزیراعظم آزاد کشمیرچوہدری عبدالمجید کی مہاجرین کے وفد سےبات چیت

kashmirمظفرآباد(بشیر احمد میر)وزیر اعظم آزاد کشمیر چوہدری عبدالمجید نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر میں قائم عوامی حکومت مہاجرین و متاثرین زلزلہ و سیلاب کی آباد کاری و بحالی اور ان کے مسائل کے حل کے لیے ہر ممکنہ اقدامات اٹھا رہی ہے اور اس سلسلے میں کوئی کوتاہی ہرگز برداشت نہیں کی جائیگی۔ وہ پیر کو یہاں مہاجرین کے رہنما چوہدری فیروز دین اور چوہدری مشتاق کی قیادت میں ملنے والے وفد سے بات چیت کررہے تھے۔ اس موقع پر آزاد کشمیر اسمبلی کے سپیکر سردار غلام صادق، وزراء حکومت میاں عبدالوحید، سردار جاوید ایوب، جاوید بڈھانوی، چوہدری پرویز اشرف، محمد طاہر کھوکھر، فیصل راٹھور، معاون خصوصی کرنل (ر) محمد ضمیر خان اور ڈپٹی سپیکر شاہین کوثر ڈار بھی موجود تھیں۔ وزیر اعظم چوہدری عبدالمجید نے کہا کہ مہاجرین 1989-90 کو ٹھوٹھہ سٹیلائٹ ٹاؤن مظفرآباد میں 751 مہاجرین خاندانوں کو مفت پلاٹ دئیے گئے ہیں جبکہ دیگر مہاجرین کو بھی چھت مہیا کرنے کے لیے اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مہاجرین جموں و کشمیر نے 47ء سے اب تک بیش بہا قربانیاں دی ہیں اور اسلام و پاکستان کے نام پر بھارتی مظالم سے تنگ آکر ریاست کے ایک حصے سے دوسرے حصے میں ہجرت کر کے سکونت اختیار کی ہے۔ عوامی حکومت مہاجرین کو اپنے جسم و جاں کا حصہ سمجھتی ہے اور یہ پہلی حکومت ہے جس نے مہاجرین کو مفت رہائشی پلاٹ دئیے ہیں جبکہ ضلع میرپور میں آباد 10 ہزار سے زائد مہاجرین جموں وکشمیر کو بھی پہلی مرتبہ مفت مالکانہ حقوق دے کر پارٹی منشور کو عملی جامہ پہنایا ہے اور مہاجرین کے دیگر مسائل کے حل کے لیے بھی حکومت کوئی کسر اٹھا نہیں رکھے گی۔ انہوں نے اس موقعہ پر وزراء میاں عبدالوحید، جاوید ایوب اور ڈپٹی سپیکر شاہین کوثر ڈار پر مشتمل کمیٹی بنائی اور انہیں ہدایت کی کہ وہ تواتر کے ساتھ مہاجرین کیمپوں کا دورہ کر کے ان کے مسائل کا جائزہ لے کر 10 دن میں رپورٹ پیش کریں تاکہ مہاجرین کے چھوٹے چھوٹے مسائل کے حل کے لیے فوری اقدامات اٹھائے جا سکیں۔

یہ بھی پڑھیں  بنگلہ دیش: اپوزیشن لیڈر کی سزائے موت برقرار رکھنے کا فیصلہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker