بین الاقوامیپاکستانتازہ ترین

مقبوضہ کشمیر میں سردی کی شدید لہر برقرار

کشمیر: شدید سردی کی وجہ سے مریضوں کی تعداد میں اضافہ
 
مقبوضہ کشمیر میں سردی کی شدید لہر برقرار ہے۔ وادی میں رات کا درجہ حرارت نقطہ انجماد سے نیچے ریکارڈ کیا گیا۔
جموں و کشمیر کے دارالحکومت سرینگر میں درجہ حرات منفی 1.6 ریکارڈ کیا گیا جبکہ جنوبی کشمیر کے قاضی گنڈ علاقے میں منفی 1.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔
کشمیر میں گزشتہ رات عالمی شہرت یافتہ سکی ریزارٹ گلمرگ سرد ترین مقام ثابت ہوا جہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 10 اعشاریہ 0 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق وادی میں گزشتہ رات دوسرا سرد ترین مقام مشہور سیاحتی جگہ پہلگام ثابت ہوا جہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی 10 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔کوکرناگ قصبے میں منفی 2.7 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جبکہ شمالی کشمیر کے ضلع کپواڑہ میں گذشتہ رات منفی 0.7 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق جموں شہر میں 5.7 ڈگری سینٹی گریڈ، کٹرا میں 6.0، باٹوت میں منفی 1.9، بانیہال میں منفی 0.8 اور بھدرواہ میں منفی 1.7 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔
مقبوضہ کشمیر میں شدید سردی کی وجہ سے لوگ مختلف بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں، اسپتالوں میں مریضوں کی تعداد میں روز بہ روز اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔
ماہرین صحت نے بچوں اور ضعیف العمر افراد کو شدید سردی کے دوران گھروں میں ہی زیادہ وقت گزارنے مشورہ دیا ہے۔ القمرآن لائن سے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر اقرا مقصود نے بتایا شدید سردی کی وجہ سے بچوں اور بوڑھوں کو چھاتی، بلڈ پریشر، نزلہ زکام و دیگر کئی امراض کا سامنا کرنا پڑسکتاہے ۔ان کا کہنا تھاکہ شدید سردی کی وجہ سے خون کی نلیاں جم جاتی ہیں، جس کی وجہ سے بلڈ پریشر میں اضافہ ہوتاہے۔پھپھڑوں میں سرد ہوا داخل ہونے سے چھاتی و دمے کے مریضوں کی زندگی ضائع ہونے کا خدشہ لاحق ہوسکتا ہے۔لہذا ایسے مریضوں کو وقت پر ادویات لینے کے ساتھ ساتھ شدید سردی سے بچنا چاہیے۔
ڈاکٹر اقرا نے کہا کہ سردی کے دوران سرطان کے مریضوں کی قوت مدافعت کم ہو جاتی ہے، جس کے سبب انہیں خطرہ لاحق رہتا ہے.انہوں نے عام لوگوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ احتیاطی طور صبح اور شام کے اوقات میں اپنے بچوں اور ضعیف العمر اشخاص کو گھر سے باہر نکلنے سے منع کریں۔
ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق انہوں نے کہا کہ شدید ٹھند میں ماسک لگا کرگھر سے باہرنکلیں اور سردی سے بچنے کے لیے گرم ملبوسات و دیگر گرم کرنے والے مختلف آلات کا استعمال عمل میں لائیں۔رواں برس سات نومبر سے ابھی تک تین بار شدید برفباری ہونیاور بارشوں کے سبب شدید سردی کی لہر میں ریکارڈ توڑ اضافہ ہوا ہے۔مسلسل منفی درجہ حرارت کی وجہ سے عام زندگی متاثر ہے۔
یہ بھی پڑھیں  معمولی رنجش پر 6افراد کے تشددسے طالبعلم سمیت 2افراد کو زخمی جبکہ سرکل پولیس نے ناجائز اسلحہ برآمداور چار اشتہاریوں کو پکڑا

یہ بھی پڑھیے :

جواب دیں

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker