تازہ ترینعلاقائی

قصور:پرائیویٹ اسکولز کی بندش کے خلاف ڈی سی آفس کے سامنے کفن پوش احتجاج

شفٹ وار سماجی فاصلے کو سامنے رکھ کر اسکولز کھولنے کی اجازت دی جائے،شبیر ہاشمی

قصور(نامہ نگار)پرائیویٹ سکولز مالکان کا پنجاب بھر میں احتجاج۔ پرائیویٹ سکولز مالکان نے ہر ضلع میں ڈی سی آفس کے سامنے احتجاج ریکارڈ کرایا۔ ضلع قصور کے پرائیویٹ اور پیف پارٹنرز نے بھی ڈی سی آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ پرائیویٹ اسکولز اساتذہ و سربراہان نے گلے میں روٹیاں ڈال کراورکفن پہن کراحتجاج کیا۔سخت گرمی میں اساتذہ اور سکول مالکان کفن پہن کر سڑک پر لیٹ کر احتجاج کرتے رہے۔ان کے مطالبے تھے کہ پرائیویٹ اسکولز یکم جون سے ایس او پیز کے ساتھ کھولے جائیں وگرنہ بھوکے مر جائیں گے۔ یوٹیلٹی بلز کی عدم ادائیگی پر میٹر کٹ چکے، کرایہ ادا نہ کرنے کی وجہ سے مالکان حراساں کررہے ہیں۔ پنجاب کے5کروڑطلباکےتعلیمی نقصان کاازالہ ناممکن ہے، اساتذہ بھوکے مر رہے ہیں۔ احتجاج کی قیادت میاں شبیر احمد ھاشمی مرکزی صدر آل پاکستان پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن کررہے تھے۔ انہوں احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نجی سکولز، پیف وپیماسکولزکا معاشی قتل کیا جارہا ہے۔بھوک وفاقہ کشی سے اساتذہ خودکشی کرنے پر مجبور ہیں۔15جولائی تک تعلیمی اداروں کی بندش سے 50%تعلیمی ادارے مکمل بنداور10لاکھ لوگ بےروزگارہوجائینگے۔ ٹیچرز کی تنخواہیں فکسُ اورملک بھر میں 90 فیصد اسکول عمارتیں کرائے پر ہیں۔وزیر اعظم پاکستان اساتذہ کیلیے’’تعلیمی ریلیف پیکیج ‘‘ کااعلان کریں۔ جب سب کچھ کھل گیا ہےتو پھرسکولز بند کیوں؟ شفٹ وار سماجی فاصلے کو سامنے رکھ کر اسکولز کھولنے کی اجازت دی جائے۔

یہ بھی پڑھیں  پنجاب میں داخل ہونے والے 12 دہشتگرگرفتار

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker