پاکستانتازہ ترین

خلیفہ ثانی حضرت عمر کایوم شہادت آج منایاجارہاہے

اسلام آباد (پاک نیوز) مضبوط اسلامی معاشرت کی بنیاد رکھنے والے خلیفہ ثانی حضرت عمر فاروق رضی اللہ تعالٰٰی عنہہ نے یکم محرم الحرام کو تریسٹھ برس کی عمر میں شہادت پائی۔ ان کا یوم شہادت آج عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہے۔  حضرت عمر فاروق وہ خلفیہ راشد ہیں، جن کے رعب ہیبت اور دبدبے سے روم اور فارس کے قیصر و کسرٰی بھی لرزتے تھے۔ آپ کی ولادت عام الفیل کے تیرہ برس بعد ہوئی، آپ نے ستائیس برس کی عمر میں اسلام قبول کیا۔  حضرت عمر رضی اللہ تعالٰی عنہہ کے قبول اسلام سے، اسلام کی شوکت و سطوت میں اضافہ ہوا اور مسلمانوں نے بیت اللہ میں اعلانیہ نماز ادا کرنا شروع کی۔ ہجرت بنوی کے بعد آپ تمام غزوات میں رسول پاک کے ہمراہ رہے۔ غزوہ حنین میں مہاجر صحابہ کی سرداری آپ کو ہی سونپی گئی۔ سیدنا حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ تعالٰی عنہہ کے وصال کے بعد مسلمانوں کے دوسرے خلیفہ مقرر ہوئے۔ اپنے دور خلافت میں مصر ،ایران، روم اور شام فتح کئے۔ قبلہ اول بیت المقدس بھی آپ کے دور خلافت میں فتح ہوا۔ آپ کا دور خلافت 22 لاکھ مربع میل پر محیط تھا۔ حضرت عمر کے دور میں ہی پولیس کا محمکہ قائم کیا گیا، مردم شماری کروائی گئی۔ آپ کا دور خلافت اشاعت و فروغ اسلام کا باعث بنا۔ 27 ذی الحج کو نماز فجر کی ادائیگی کے دوران آپ کو خنجر کے وار سے شدید زخمی کر دیا گیا۔  آپ نے یکم محرم الحرام کو 63 برس کی عمر میں شہادت پائی۔ آپ روضہ نبوی میں نبی مکرم اور خلفیہ اول حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ تعالٰٰی عنہہ کے پہلو میں آسودہ خاک ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  بھائی پھیرو:وفاقی وزیربننے کے بعد سردارطالب حسن نکئی کاشانداراستقبال

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker