پاکستانتازہ ترین

خواجہ سراؤں کو جائیداد میں سے حصہ دیا جائے،سپریم کورٹ

اسلام آباد(بیوروچیف) سپریم کورٹ نے خواجہ سراوٴں کے کیس نمٹاتے ہوئے حکم دیا ہے کہ خواجہ سراہوں کو منقولہ اور غیر منقولہ جائداد سے محروم نہ رکھا جائے۔خواجہ سراووٴں کے حقوق اور زندگی کا تحفظ ریاست کی ذمہ داری ہے۔چیف جسٹس افتخار چوہدری کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے مقدمے کی سماعت کی۔چیف جسٹس نے مقدمہ نمٹاتے ہوئے فیصلہ لکھایا کہ خواجہ سراوٴں کی عظمت کا خیال رکھا جائے ۔انہیں دوسرے درجے کا شہری نہ سمجھا جائے۔خواجہ سراہوں کو تمام مساوی حقوق حاصل ہیں کہ یہ افراد بھی معاشرے کے مفید شہری بن سکیں ۔اس کے لئے وفاقی اور صوبائی حکومتیں مواقع فراہم کرے۔فیصلے میں کہا گیا ہے کہ خواجہ سراوٴں کو کوئی بھی باعزت پیشہ اختیار کرنے کی آزادی حاصل ہو گی۔دوران سماعت خواجہ سراوٴں نے چیف جسٹس سے استدعا کی کہ نہ ان کی شادی ہوتی ہے نہ اولاد۔انھیں سا لگرہ منانے کے لئے تحصیل میونسپل کمیٹی کا ہال کرائے پرحاصل کرنے کی عدالت اجازت دے۔چیف جسٹس نے مسکراتے ہوئے خواجہ سراوٴں کو جواب دیا کہ آپ کو عدالت نے تمام حقوق دے دیئے ہیں مزید آپ عدالت سے کیا چاہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  تحریک آزادی کشمیرامریکہ انڈیا معاہدہ اور بلوچستان

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker