تازہ ترینعلاقائی

حکمرانوں ہوش کے ناخن لو،ریڑھ کی ہڈی زراعت کو تباہ نہ کرو،صدرکستان بورڈ

اسلام آباد(پریس ریلیز ) کسان بورڈ پاکستان کے صدر سردار ظفر حسین خاں نے تیرہ نومبر 2012 سے شروع ہونے اسلام آباد نیشل پریس کلب کے سامنے شرع ہونے والے تین روزہ احتجاجی کیمپ کے پہلے روزشرکا ،تاجروں ، مزدوروں اور کسانوں کے ایک بڑے اجتماع سے خطاب کر تے ہوئے کہاکہ پٹواری ،پولیس ،اور انتظامیہ جنہوں نے کسانوں کو لوٹ لوٹ کر بڑی بڑی کوٹھیاں ،گاڑیاں اور بینک بیلنس بنا لیا میں ان سے پوچھتا ہوں کہ یہ سب کچھ کسان پر ظلم کرکے نہیں کمایا۔۔۔؟ان لٹیروں کا احتساب ہونا اور کسان کو اسکا حق دینا بہت ضروری ہوگیا ہے وگرنہ اس ملک میں بھوک اور ننگ ننگا ناچ ناچے گی،۔انہوں نے کہا تمباکوکا ریٹ 240 روہے فی کلو،گنے کا 250 فی من ،اوردیگر تمام اجناس کی قیمتوں کو بڑھایا جائے ۔کھاد کا بحران پیدا کر کے ہر فصل کے موقعے پر کسانوں کو لوٹا جاتا ہے اور من مانی قیمتیں وصول کی جاتی ہیں ۔ہمارا مطالبہ ہے کہ کھاد کی ہر بوری پر قیمت درج کی جائے اور شوگر ملوں کی پے منٹ بھی بزریعہ چیک کی جائے ،انہوں نے کہا کہ پنجاب اور سندھ میں شوگر ملوں نے کسانوں کو لوٹنے کیلیے ایکا کر لیا ہے۔گنے کی مقررکردہ قیمت170فی من انتہائی کم ہے کیونکہ لاگت کاشت میں پچاس فی صد اضافے کے بعد گنے کی قیمت مقرر کی جانی چاہیے۔انجمن تاجراں پاکستان کے نائب صدر محمد اجمل بلوچ ،اور این ایل ایف کے صدر شمس صواتی نے کسانوں سے اظہار یکجہتی کرتے کہا کہ اس ملک کے تاجر اور مزدور بھی کسان بھائیوں کیساتھ ہیں کیونکہ اگر زراعت مضبوط ہے تو ملک کی پوری معیشت مضبوط ہے۔صوبہ سرحد کسان بورڈ کے صدر رضوان اللہ خاں مہمند،شمالی پنجاب کے صدر محمد نواز چھینہ نے اپنے پرجوش خطاب میں اعلان کیا کہ اگر کسانوں کے مطالبات نہ مانے گئے تو پورے ملک کا پہیہ جام کر دیں گے اور لٹیرے حکمرانوں سے اپنا حق چھین کررہیں گے۔ جنرل سیکرٹری ملک محمد رمضان روہاڑی نے آنے والے تاجروں،مزدوروں،صحافیوں کا شکریہ ادا کیا اور اعلان کیا کہ اگر حکمرانوں نے پر امن طریقے سے ہمارے مطالبات نہ مانے تو پھر ہم لٹیرے حکمرانوں اور لٹیرے مل مالکان کا گھیراؤ کریں گے۔انہوں نے ایک صحافی کے سوال کے جواب میں کہا کہ تحریک کے اگلے مرحلے کا اعلان پندرہ نومبر کو احتجاجی کیمپ میں کیا جائے گا۔شرکا نے وقفہ وقفہ سے ،،کسان بچاؤ۔۔۔ملک بچاؤ،،کے فلک شگاف نعرے لگائے۔آج کے احتجاجی کیمپ میں آزاد کشمیر،صوبی خیبر پختونخواہ اور شمالی پنجاب کے اضلاع کے کسانوں نے شرکت کی۔

یہ بھی پڑھیں  ڈیرہ غازیخان:عمران خان 14اکست کو پاکستانی قوم کی جنگ لڑنے جا رہے ہیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker