پاکستانتازہ ترین

کسان بورڈ پاکستان کے صدر سردار ظفر حسین کی صحافیوں سے گفتگو

لاہور ﴿ پ ر﴾ کسان بورڈ پاکستان کے صدر سردار ظفر حسین کی صوبہ پنجاب کے ہنگامی دورے کے بعد صحافیوں سے گفتگوکر تے کہا  کہ مہنگی بجلی کی لوڈشیڈنگ اورمہنگے ڈیزل کی وجہ سے پنجاب کے سینکڑوں ٹیوب ویل بند ہوچکے ہیں۔با اثر افراد کی پانی چوری کی وجہ سے ٹیلوں پر واقع پچیس فی صد رقبہ بنجر بن چکا ہے۔ ۔دوسری طرف اس وقت کماد ،چاول ،کپاس،چارہ،سبزیات اور دیگر فصلوں کیلیے پانی کی اشد ضرورت ہے ۔پانی کی شدید کمی کی وجہ سے کروڑوں ایکڑ پر کھڑی فصیلیں پانی نہ ملنے کی وجہ سے تباہ ہوجائیں گی۔
پنجاب کی پگ کے دعویداروں نے پہلے ہی پنجاب کے حصے کا انیس فی صد پانی دوسرے صوبوں کو دیکر پنجاب کے کروڑوں کسانوں کا حق مار رکھا ہے ۔ بجلی اورڈیزل کی ہوش ربا قیمتوں اور طویل لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے ہزاروں ٹیوب ویل بند ہو چکے ہیں ۔با اثر افراد اور محکمہ انہار کے بعض کرپٹ افسراں کی ملی بھگت کی وجہ سے ٹیلوں پر واقع پچیس فی صد رقبہ پانی کی شدید کمی کا شکار ہو کر بنجر بن رہا ہے ۔ایک طرف حکمران ٹولہ میں شامل صنعت کار ڈیزل، بجلی، کھاد، اور دیگر زرعی مداخل مہنگے کر کے قومی خزانے کو لوٹ کر عیاشیاں کر رہے ہیں تودوسری طرف پنجاب کے حصے کا پانی صوبہ سندھ کو دیکر پنجاب کے کسانوں کے منہ سے آخری نوالہ بھی چھین لینا چاہتا ہے۔کالاباغ ڈیم بنائے بغیر پاکستان میں پانی اور بجلی کی کمی کو پورا کرنا ناممکن ہے اس لیے حکمران دوسرے صوبوں کے کروڑوں کسانوں کی حق تلفی کر نے بجائے فوری طور پر کالاباغ ڈیم سمیت دوسرے ڈیم تعمیر کریں ۔مرکزی اور صوبائی حکومتیں چاروں صوبوں کے حقوق کا تحفظ کریں۔انہوں نے مطالبہ کیاکہ بجلی،گیس،اور ڈیزل کی قیمتوں میں فوری کمی کی جائے،اور پانی چوری کیلیے سخت ترین قانون سازی کر کے ٹیلوں پر واقع لاکھوں ایکڑ اراضی کو بنجر ہونے سے بچایا جائے۔ پنجاب کے حصے کا پانی کسی دوسرے صوبے کو نہ دیا جائے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker