تازہ ترینعلاقائی

کوہاٹ:اعظم خان ہوتی عوامی نیشنل پارٹی کے غدار ہیں

azam hotiکوہاٹ (ڈسٹرک رپوٹرر) اعظم خان ہوتی عوامی نیشنل پارٹی کے غدار ہیں وہ ایک ذاتی مسئلے کو ہمارے مرکزی قائد اسفندیار ولی خان کی کردار کشی کے لیے اچھال رہے ہیں جس کی ہم پرزور مذمت کرتے ہیں ہم ان کے خلاف بھرپور قانونی اور انضباطی کارروائی کرنے کے لیے تیار کر رہے ہیں‘ ان خیالات کا اظہار کوہاٹ پریس کلب میں اے این پی کی آرگنائزنگ کمیٹی کے ضلعی چیئرمین عنایت قریشی‘ سابقہ ایم این اے خورشید بیگم‘ خاتون ایم پی اے مسرت شفیع ایڈووکیٹ‘ سعید شاہ ایڈووکیٹ‘ مسعود خان خلیل ایڈووکیٹ و دیگر نے ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا‘ انہوں نے کہا کہ اعظم ہوتی یہ بتائیں کہ وہ کونسی مصلحت کے تحت آج تک چپ تھے آج وہ اقتدار میں نہیں ہیں تو ان کی مفاد پرستی کھل کر سامنے آ چکی ہے وہ جھوٹ بول کر اے این پی کو نقصان پہنچانے کے درپے ہیں ان سے پہلے بھی ہر دور میں سامراج کی ایجنٹوں نے اے این پی کو مٹانے کی کوشش کی ہے مگر وہ خود مٹ چکے ہیں‘ اے این پی آج بھی زندہ ہے اور انشاء اللہ کل بھی زندہ رہے گی‘ انہوں نے کہا کہ بعض عناصر کی جانب سے باچا خان کی تحریک عوامی نیشنل پارٹی کو بچانے کے نام پر اپنے قائد اسفندیار ولی کے خلاف بے بنیاد الزامات اور منفی پروپیگنڈے کو مسترد کرتے ہوئے واضح کرتے ہیں کہ اسفندیار ولی کے خلاف منفی بیان بازی دراصل باچا خان اور ولی خان کے ساتھ غداری ہے‘ اے این پی سے وابستہ کوئی کارکن اس کو کسی صورت برداشت نہیں کر سکتا‘ اسفندیار ولی کی قیادت میں اے این پی نے پختون قوم کی ناقابل فراموش خدمت کی ہے پختون قوم اس امر سے واقف ہے کہ پختونوں کی وحدت کا مرکز اسفندیار ولی خان کی ذات ہے لہٰذا جو عناصر اسفندیار ولی خان کے حوالے سے دوسری رائے رکھتے ہیں وہ سنگین غلط فہمی کا شکار ہیں اور ان کی منزل ناکامی کے سوا کچھ نہیں کیوں کہ پارٹی کے تمام کارکن اور قائدین محترم قائد اسفندیار ولی خان کے ساتھ ہیں‘ اعظم ہوتی نفسیاتی مریض بن چکے ہیں یہی وجہ ہے کہ آج ان کے اپنے بیٹے سابقہ وزیر اعلیٰ امیر حیدر ہوتی اور امیر غزل ہوتی بھی ان کے خلاف ہو چکے ہیں اور وہ اے این پی کے ہردل عزیز قائد اسفندیار ولی خان کے ساتھ کھڑے ہیں‘ پریس کانفرنس کے اختتام پر تمام شرکاء نے کہا کہ یہ سارا ڈرامہ 2014 کے پارٹی انتخابات پر اثر انداز ہونے کے لیے رچایا گیا ہے مگر مخالفین کان کھول کر سن لیں کہ اسفندیار ہمارے بزرگ باچا خان اور ولی خان کے حقیقی وارث ہیں اور ہم کو ان پر بھرپور اعتماد ہے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button