پاکستان

ڈاکٹرشکیل آفریدی کے ہمراہ سروے کرنے والی لیڈیزہیلتھ ورکرزکو سرکاری ملازمت سے نااہل قراردیدیا گیا

پشاور ﴿بیورو چیف﴾ حکومت نے القاعدہ کے رہنمائ اسامہ بن لادن کے ایبٹ آباد میں موجودگی کے حوالے سے ڈاکٹر شکیل آفریدی کے ہمراہ سروے کرنے والی لیڈیزہیلتھ ورکرزکو سرکاری ملازمت سے نااہل قراردیاہے جبکہ ان کے نام ای سی ایل فہرستوں میں شامل کرنے کے امکانات ظاہرہو گئے ہیں ۔ڈاکٹرشکیل آفریدی کے ہمراہ سروے کرنے والی پندرہ لیڈیز ہیلتھ ورکرزکوملازمت سے برطرف کردیاگیا تھا جن میں مختار سلیم ، آمنہ یاسمین رستم ، کوثر وحید ، نسیم طارق ، ممتاز شمس ، گلفرار خاتون ، نسیمہ اختر، رضیہ بی بی ، ریحانہ ، یاسمین لال خان ، چاند بی بی ، فرزانہ ، فرحت ناہید وغیرہ شامل ہیں ۔ ذرائع نے بتایا ہے کے برطرفی کے بعد چاروں صوبائی محکموںکے سیکرٹریز اور دیگر پرائیویٹ اداروںکو برطرف کئے جانے والے ایل ایچ ویزکی فہرستیں ارسال کی ہے اوران ایل ایچ ویزکو آئندہ کے لئے سرکاری ملازمت دینے کے حوالے سے نااہل قرار دیا ہے ۔ ذمہ دار ذرائع نے بتایاہے کہ صوبائی اور وفاقی حکومتوں نے اس سلسلے میں باقاعدہ طور پر قانون نافذکرنے والے اداروں کو بھی آگاہ کر دیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button