تازہ ترینعلاقائی

لاہور:چیئرمین ایمرجنسی رسپانس کمیٹی کا سمن آباد ٹاؤن کی یونین کونسلوں کا دورہ

لاہور(نامہ نگار)چیئر مین ٹاؤن ایمرجنسی رسپانس کمیٹی و رکن قومی اسمبلی میاں مرغوب احمد نے سمن آباد ٹاؤن میں کوڑے کو پیک کرنے والی اور پلاسٹک کی اشیاء بنانے والی فیکٹریوں اور موٹر ورکشاپ میں ڈینگی لاروا کی نشاندہی پر مالکان کے خلاف ڈینگی کنٹرول ایکٹ کے تحت مقدمات درج کرنے کی ہدایت کی ہے۔گزشت روز یہاں انسداد ڈینگی کے حوالے سے سمن آباد ٹاؤن کی یونین کونسلوں 84،87اور90 کے دورہ کے موقع پر جاری کئے ۔اس موقع پرمیاں مرغوب احمد نے بند روڈ پر واقعہ پلاسٹک کی اشیاء بنانے والی فیکٹری میں پانی کے حوضوں میں کثیر تعداد میں ڈینگی لاروا پایا جانے پر کارروائی کرتے ہوئے پانی ڈرین کروا کر اور لاروا تلف کرنے کی دوائی کے چھڑکاؤ کے بعد فیکٹری سیل کر دی ہے ۔انہوں نے کوڑا پیک کرنے والی فیکٹری کے اچانک معائنہ کے دوران چھت پر پڑے پرانے ٹائروں ،ٹین کے کنستر وں اور کوڑ کباڑ میں موجود پانی میں ڈینگی لاروا کی موجودگی پر فیکٹری کے مینجر کو موقع پر ہی گرفتار کروا کرفیکٹری سیل کروا دی اور ان فیکٹریوں کے خلاف ڈینگی کنٹرول ایکٹ کے تحت تھانہ شیرا کوٹ اور تھانہ ملت پارک میں مقدمات درج کروا دیئے ہیں جبکہ یونین کونسل 87میں واقع ورکشاپ کی چھت پر عرصہ سے پڑے ٹائروں میں ڈینگی لاروا کی موجودگی پر ٹائروں کو قبضہ میں لیکر ورکشاپ سیل کر دی گئی ہے۔میاں مرغوب احمد نے بابو صابو انٹر چینج کے ساتھ واقع ٹرک اڈے اور طلعت پارک میں عرصہ درراز سے خراب کھڑی بسوں جن کے شیشے ٹوٹے ہوئے تھے میں ڈینگی لاروا پایا جانے پر دوائی کا چھڑکاؤ کرنے اور بس مالکان کے خلاف کارروائی کے احکامات جاری کئے ہیں ۔انہوں نے یونین کونسل 90کے علاقے شاہین آباد کا بھی دورہ کیا اور واسا حکام کو پانی کے جوہڑ سے ایک یوم کے اندر گندے پانی کی نکاسی کی ہدایات دیں۔قبل ازیں انہوں نے گلشن راوی واسا کے دفتر میں ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے مسلم لیگی ورکرز کو ہدایت کی کہ وہ گھرو ں میں بیٹھنے کی بجائے فیلڈ میں نکلیں اور ڈینگی لاروا کے خاتمے میں حکومت کا ہاتھ بٹھائیں ۔اجلاس میں یونین کونسل کے سیکرٹریز نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ انہیں ڈینگی لاروا کے خاتمہ کی ادویات مناسب مقدار میں نہیں مل رہیں جس پرمیاں مرغوب احمد نے شدید ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ افسران کو سختی سے تنبیہ کی کہ آئندہ انہیں اس قسم کی کوئی شکایت نہیں ملنی چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں  جمہوریت کی بالادستی ہی ریاست بچانا ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker