پاکستانتازہ ترین

ملکی سلامتی کو خطرات بانی پاکستان کےرہنماء اصولوں سے روگردانی کانتیجہ ہے، اہلسنت والجماعت پاکستان

لاہور(پ ر)ملکی سلامتی کو خطرات بانی پاکستان کے رہنماء اصولوں سے روگردانی کا نتیجہ ہے ،قائداعظمؒ اسلامی نظام کو نافذ کرنا چاہتے تھے،حضرت عمرؓ کے دور حکومت کو اپنا آئیڈیل قراردیتے تھے،بانی پاکستان کو سیکولرگرداننے والے ان کے قول فعل میں تضادپیدا کرکے انہیں منافق ثابت کرنا چاہتے ہیں،تقریب سے خطاب۔ان خیالات کا اظہار اہلسنت والجماعت کے سربراہ علامہ محمد احمد لدھیانوی نے بانی پاکستان قائداعظم محمدعلی جناح کے یوم وفات پر مرکز اہلسنت میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہاکہ بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح ایک سچے اور کھرے مسلمان تھے ،جنہوں نے پاک ارض خطہ اسلامی نظام کے نفاذ اور اقلیتوں کو مکمل تحفظ فراہم کرنے کے لئے بنایاتھا، آج المیہ یہ ہے کہ قائداعظم کے تصور پاکستان کو پس پشت ڈال دیاہے ۔ہندوستان کے مسلمانوں نے تصور قائداعظم کے حق میں ووٹ دیئے تھے،اور اس کے لئے تاریخی قربانیان پیش کیں تھیں، تحریک پاکستان کے منصفانہ مطالعے سے ہر شخص اس نتیجہ پر پہنچے گاکہ قائد اعظم ایک اسلامی ماڈرون ،جمہوری اور فلاحی ریاست چاہتے تھے،یہی ان کا تصور پاکستان تھا اسی کے لئے بیش بہا قربانیاں دی گئیں تھیں،قائداعظم نے قیام پاکستان سے پہلے ایک سو ایک بار اور قیام پاکستان کے بعد 14بار اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاکستان کے آئینی ڈھانچے کی بنیاد اسلامی اصولوں پر رکھی جائے گی،اس میں قرآن ہمارا رہنماء ہوگا،اوروہ خلافت راشدہؓکے دور کواپناآئیڈیل قراردیتے تھے ، حضرت عمر فاروقؓ سے بہت زیادہ متأثرتھے اور ان ہی کی انتظامی فعالیت کو پاکستان میں ہر سطح پر نافذکرنے کا ارادہ رکھتے تھے۔بعض عناصرقائداعظم کو سیکولر ثابت کرنا چاہتے ہیں،وہ شاید انہیں آج کے حکمرانوں جیساتصور کرتے ہیں،اور ان کے قول فعل میں تضاد پیدا کرکے انہیں منافق ثابت کرنے کی سعی لاحاصل میں مصروف ہیں ،

یہ بھی پڑھیں  ساہیوال:پنجاب حکومت خواتین کی ترقی،فلا ح وبہبوداورانہیں تحفظ فراہم کرنے کے لیے دوررس اقدامات اٹھا رہی ہے ،حمیدہ وحید الدین

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker