تازہ ترینعلاقائی

گورنمنٹ سکول کے ہیڈ ماسٹرکی طلبہ سےجنسی زیادتی ،احتجاج پرفرار

لاہور (نمائندہ خصوصی) پاکستان کے صوبائی دارالحکومت لاہور میں ایک اسکول کے ہیڈماسٹرنے متعدد طالب علموں کو مبینہ طور پر جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ،طلبہ کی جانب سے پرتشدد احتجاج کے بعد ہیڈماسٹر فرارہوگیا۔
طلبہ کو زیادتی کا نشانہ بنائے جانے کے واقعات گورنمنٹ اسلامیہ ہائی اسکول لاہور میں پیش آئے جہاں ظفر شہزاد نامی ہیڈماسٹر نےگزشتہ کچھ عرصے سے مبینہ طورپرکئی طلبہ کے ساتھ بدفعلی کی۔ جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والے طلبہ کی عمریں 8سے 16 برس کے درمیان بتائی گئی ہیں۔ مقامی افراد کے مطابق زیادتی کا شکار ہونے والے ایک طالب علم نے ہیڈماسٹر کے خلاف اپنے دیگر ساتھیوں سے شکایت کی جس پر طالب علموں نے اسکول میں شدید ہنگامہ آرئی کی اور تدریسی عمل معطل کرادیا۔ مشتعل طلبہ نے اسکول کے گملے توڑ ڈیے اور ہیڈماسٹر کے دفتر پر دھاوا بولا تاہم وہ اس سے قبل فرار ہوگیا، لڑکوں نے ظفرشہزاد کے دفتر کے باہر لگی نام کی تختی اکھاڑ دی اور اسکول کے باہر نکل کر بھی اپنا احتجاج جاری رکھا۔ ہنگامہ آرائی کےبعد مقامی پولیس نے آکر مشتعل طلبہ کو ہیڈماسٹر کی گرفتاری کی یقین دہانی کرائی جس کے بعد طلبہ نے احتجاج ختم کردیا۔

یہ بھی پڑھیں  ٹیکسلا:عالم اسلام کو مصائب و آلام سے نکالے بغیر دلی مسرت حاصل نہیں ہوسکتی ،شیخ ذیشان سعید

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker