پاکستانتازہ ترین

رانا مشہود کے اعزاز میں میوزیکل عشائیہ وزراءکی من مانی اورن لیگ برطانیہ کے اختلافات

لاہور ( مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں مسلم لیگ ن کے اندرونی اختلافات نے پاکستانی ہائی کمیشن اور وزراءمیں عدم روابط کے بے نقاب کردیا ہے اور یہ انکشاف بھی ہوا ہے کہ سرکاری دورے کے نام پر برطانیہ جانے والےءوززراءدرحقیقت ذاتی دوروں پر جاتے ہیں ۔ یہ انکشاف ایک ’رنگین‘ محفل کے بل کی عدم ادائیگی پرہوا جس کے بل کی ادائیگی کیلئے اس محفل مین شرکت کرنے والے پنجاب کے وزیر سیاحت، تعلیم ، کھیل اور امورِ نوجواناں رانا مشہود احمد سے 2200پاﺅنڈ کی ادائیگی کرانے کی سفارش کرائی گئی اور انہیں بتایا گیا اس ’محفل‘ کے آرگنائزرعطاءالحق کی طرف سے جاری ہونے والے دو چیک باﺅنس ہوگئے ہیں ۔ اس میوزکل عشائیے میں شرکت کرنے والے فنکاروں کو تو ادائیگی کی گئی لیکن مجھ سے جھوٹ بولا گیا ۔ ایک ویب سائٹ کی جانے والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مسلم لیگ ن کی برطانیہ کے مقامی عہدیداروں نے متنازع ایچیومنٹ ایوارڈز کے موقع پر پنجاب کے وزیر سیاحت، تعلیم ، کھیل اور امورِ نوجواناں رانا مشہود احمد خان کے اعزاز میں پرتکلف میوزیکل عشائیے کا اہتمام کیا گیا۔ہوٹل کے مالک انیق ملک نے اپنے ریکارڈ میں اس کی بکنگ میوزیکل نائٹ کے طور پر نہیں کی تھی ۔میوزیکل عشائیے کے اختتام پر ہوٹل کے مالک کو بل ادا نہ کیا گیا اور جب اس عشائیے کے اہم مہمان رانا مشہود احمد کو بتایا گیا کہ ان کے اعزاز میں دیے جانے والے عشائیے کا بل ادا نہیں کیاگیا اور وہ اس کی ادئیگی کیلئے اپنا کردار ادا کریں تو ان کے ارد گرد موجود ن لیگ کے مقامی لیڈر وں کو چپ لگ گئی اور انہوں نے ہزیمت تو محسوس کی مگر بل ادا نہ کیا ۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ وزیر سیاحت مقامی سیاسی اختلافات کا حصہ بھی بنے جنہوں نے عہدیداروں کی حقیقت کی پروہ کیے بغیرصرف دوستوں کے کہنے پر وہاں مخصوس لوگوںسے ملاقاتیں کیں اور اس کے بارے میںہائی کمیشن کو بھی مطلع نہ کیا جو معمول کے مطابق وزراءکے دوروں کا شیڈول ترتیب دیتا ہے لیکن اس کی پرواہ کیے بغیر ذاتی ایجنڈے اور دوستوں کو ترجیح دی جاتی ہے۔اس ضمن مین پاکستانی ہائی کمیشن کے ترجمان کا کہنا ہے کہ جب وزراءآتے ہیں تو انہیں امیگریشن کی سہولت فراہم کی جاتی ہے اور وہاں قیام کا شیڈول ترتیب دیا جاتا ہے جس میں برطانوی ہم منصب اور دیگر حکام سے ملاقاتوں کا وقت شامل ہوتا ہے ۔وزیر سیاحت کے دورے کے بارے میں ہائی کمیشن کے آگاہ تک نہیں کیا گیا تھا بلکہ ایئرپورٹ پر بھی ان کے دوستوں نے ہی ان کا استقبال کیا تھا ۔ ان کی برطانیہ آمد کا ہائی کمیشن کو وہاں کی نجی ملاقاتوں اور اجلاسوں میں شرکت کے بعد علم ہواتھا۔ ن لیگ برطانیہ کی مرکزی قیادت کو بھی اس بابت معلوم نہیں تھا کیونکہ پارٹی کے اہم رہنما زبیر گل بھی کسی میٹنگ میں دکھائی نہیں دیے بلکہ ن لیگ کے ایک رہنما ریاض ملک نے ہی وزیر سیاحت کی میزبانی کی اور اپنی پسند کے لوگوں سے ملاقاتیں کروائیں ۔ایک مسلم لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ مقامی سطح پر ہم اپنی پارٹی میں کئی مسائل میں گھرے ہوئے ہیں ، ہر کوئی اپنے ایجنڈے پر چل رہا ہے اور برطانیہ کادورہ کرنے والے وزیروں و اہم شخصیات کا انتظار کرتے ہیں جو کوئی ان کے ہاتھ چڑھتا ہے ،اسے اپنے مقاصد کیلئے قابوکرلیاجاتا ہے ، یہ روش ختم ہونا چاہئے کیونکہ اس سے پارٹی بدنام ہورہی ہے ۔رپورٹ کے مطابق اس سارے معاملے کی اشاعت کا علم ہونے پرہوٹل کے مالک اور میوزیکل عشائیے کے آرگنائزرز نے اپنا موقف بدل لیا اور کہا کہ ادائیگی ہوگئی ہے لیکن ثبوت کے طور پر اس ادائیگی کی رسید نہیں دکھائی گئی۔

یہ بھی پڑھیں  چارلی ہیبڈو کا شیطانی کھیل

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker