تازہ ترینعلاقائی

کاہنہ کے گردونواں میں ہیضہ وباء کی صورت اختیار کرگیا،سینکڑوں مریض مختلف ہسپتالوں میں منتقل

لاہور(بیورو رپورٹ)کاہنہ نو لاہور کے گردنواں میں ہیضہ وباء کی صورت اختیار کرگیا ،پچھلے 3دنوں میں سینکڑوں افرادہیضہ کا شکار ہوئے ،مقامی ڈاکٹر ز کے مطابق اکثریت کو ابتدائی علاج معالجہ کے بعد ہستپالوں سے چھٹی دے دی گئی، جبکہ درجنوں مریض اب بھی علاقہ کے نجی ہسپتالوں میں داخل ہیں جن میں سے چند کی حالت نازک ہے ۔ نمائندہ میڈیاورلڈلائن سے بات کرتے ہوئے ہومیوڈاکٹر محمد اکرام نے بتا یا کہ اگر کھانے پینے کے برتن اور غذاؤں کو مکھیوں ،دھول مٹی سے بچا کر صاف ستھرے طریقے سے استعمال کیا جائے تو ہیضہ جیسے خطرناک مرض سے بچا جاسکتا ہے ،خودنخواستہ اگر کوئی فرد ہیضہ کا شکار ہوجائے تو اُسے فوری طبی امداد کیلئے مستند ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہئے اگر ڈاکٹر گھر سے دور ہو تو راستے میں مریض کو نمکول ملاپانی بار بار پلانا چاہئے تاکہ جسم میں پانی کمی نہ ہو ،انہوں نے مزید بتایا کہ کاہنہ اور ارد گرد کے علاقوں میں زیر زمین سے پانی انتہائی آلودہ ہوچکا ہے جو ہیضہ سمیت بہت سی مزید بیماریوں کا سبب بنتا ہے،آگاہی کی کمی کی وجہ سے اہل علاقہ احتیاتی تدابیر نہیں اپناتے ،زیرزمین سے نکلنے والے پانی کو اگر اوبال لیا جائے تو پانی پینے کے قابل ہوسکتا ہے،ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹراکرام نے کہا کہ تازہ سبزیاں اور پھلوں کا زیادہ استعمال کیا جائے،باسی کھانے سے پرہیز اور کھانا دیر تک فریز نہ کیا جائے۔ 

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button