تازہ ترینرپورٹس

میرے بعد بنیں گی داستابنیں بہت ۔۔۔

لندن (مانیٹرنگ سیل) لیبیا میں فرائض انجام دینے والی ایک فرانسیسی خاتون صحافی مس کوجین نے انکشاف کیا ہے کہ لیبیا کے مقتول صدر قذافی انتہائی شوقین اور خواتین کے دلدادہ تھے جو لڑکی پسند آ جاتی اسے عیاشی کیلئے فوجی وردی پہنا کر اپنا ذاتی محافظ بنا لیتے تھے ۔ انہوں نے تریپولی یونیورسٹی میں ایک ریسٹ ہاﺅس بنا رکھا تھا ۔ خاتون صحافی نے اپنی کتاب میں انکشاف کیا کہ لڑکیوں کے ایک سکول میں انعامات کی تقسیم کے دوران کرنل قذافی کو ایک پندرہ سالہ طالبہ ثریا پسند آ گئی تو اسے انعام دیتے ہوئے اسکے سر سے سر ٹکرایا جس کا مطلب یہ تھا کہ یہ لڑکی کل اس کے محل میں ہو کرنل قذافی کی ذاتی خواتین محافظ اس اشارے کو خوب سمجھتی تھیں اور انہوں نے اس لڑکی کو زبردستی اغوا کر کے قذافی کے’ حریم ‘میں پہنچا دیا ۔محل میں حریم وہ جگہ تھی جہاں پر کسی کو جانے کی اجازت نہیں تھی جہاں صرف وہ خواتین بغیر لباس کے موجود ہوتی تھیں جن کے ساتھ کرنل قذافی برہنہ حالت میں موج مستی کرتا تھا ۔خاتون صحافی نے یہ انکشاف بھی کیا ہے کہ کرنل قذافی ذاتی ای میلز بھی ان بلاک کر لی گئی ہیں اور جلد ہی اہم انکشافات کیے جائیں گے ۔

یہ بھی پڑھیں  داؤد خیل: خورشید خان خٹک چےئرمین یونین کونسل ٹولہ بانگی خیل کا فاروڈ بلاک بنانے کا اعلان خوش آئند ہے

یہ بھی پڑھیے :

One Comment

  1. ap agar sach farma rahi hain to col. qazafi ky samny kehti ae ar wesy b France ki awam ar Govt hamesha sy muslimano k khilaf rahy hain

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker