تازہ ترینکالمملک ساجد اعوان

لیڈراور عوام

ہماراوطن پاکستان جس میں کسی چیز کی کمی نہیں ہے اللہ پاک نے پاکستان کو ایسی ایسی چیزوں سے نوازا ہے جس کا کوئی نعم البدل نہیں ہے مگر افسوس اس بات کا ہے کہ جس نے بھی حکومت کی ہے اس نے صرف اور صرف اپنا بنایاہے ہمارے ملک میں کوئی قانون نہیں ہے آئے روز اپنی مرضی کے قانون بنتے اور ختم ہوتے ہیں اور اگر کوئی قانون ہے بھی تو صرف اور صرف غریب آدمی کے لئے 1947ء میں جب پاکستان بنا تو ہمیں ایک الگ وطن رہنے کو ملا اور جو بھی برسراقتدارآیا اس نے ہمیشہ سے غریب عوام کو درگزرکیا ہمارے ملک میں سب سے بڑا پہلو تعلیم ہے اس میں بھی مساوات کو مدنظر نہ رکھاگیا ہر طرح کے کالج اور یونیورسٹیاں بنادی گئی جن میں غریب آدمی کے بچے تعلیم حاصل کرنا تو دورکی بات تعلیم کا سوچ بھی نہیں سکتے بڑی بڑی فیس کون ادا کرے تعلیم کا صرف اور صرف ایک نظام اور نصاب ہو اس لئے غریب آدی کے بچے ہر فیلڈ میں پیچھے رہ جاتے ہیں اور بڑے بڑے لوگوں کے بچوں کو بنے بنائے آفس مل جاتے ہیں اور غریب کا بچہ گورنمنٹ سکول سے پڑھ کر یا تو فوج میں بھرتی ہوجاتاہے یا پھر کسی مل یا فیکٹری میں نوکری کرلیتاہے اور پڑھے لکھے نوجوان ڈگریاں ہاتھوں میں لئے نوکریاں ڈھونڈرہے ہیں یہاں تک کہ وہ چاہتے ہیں کہ آفس بوائے کی نوکری مل جائے تاکہ گھر کا کچن چل سکے مگر نوکری نہیں ہے یہاں پر ہمارے لیڈران نعرے لگاتے ہیں کہ ہم نے یہ کردیا وہ کردیا غریب آدمی سے ہر چیز پر ٹیکس لیاجاتاہے گھریلوضروریات زندگی سب پر ٹیکس لگاہوتاہے غریب کو نوکری چاہیئے اور مہنگائی پر کنٹرول چاہیئے اس کو اس سے کیا کہ فلاں جگہ پر پل بنادیاگیا فلاں جگہ پر انڈرپاس بنادیا گیا یہ پل تو ہمارے دیئے گئے ٹیکسوں کے پیسوں سے بن رہے ہیں اس میں حکومت کا کیا کمال ہے کوئی لیڈر کسی شہر میں آجائے تو عوام کی رسائی مشکل ہوجاتی ہے ان کے ساتھ گارڈ ہی عوام کو دور رکھتے ہیں اور ایک بات سامنے آئی ہے کہ صدرزرداری صاحب کے بیٹے بلاول بھٹو زرداری نے نواب شاہ کا دورہ کیا تو اسکے کے ساتھ صرف 33گا ڑیاں سکیورٹی کی تھیں اور غریب نہ جانے روزانہ کتنے سڑکوں پر مرجاتے ہیں ( غریب عوام کا بھی اتنا ہی حق ہے جتنا بلاول زرداری کا) ۔اس غریب کی وجہ سے یہ لوگ ووٹ لیکر کرسی سنبھالتے ہیں اور بعدمیں عوام سے ہاتھ ملانا گوارہ نہیں کرتے ہمارے لیڈرتو عیاشی کی زندگی بسرکرتے ہیں اور عوام ذلیل ہورہی ہوتی ہے جیسے کہ پاکستانی عوام کا حال ہے مہنگائی‘بیروزگاری اس قوم کا مقدر بن چکی ہے ہر طرف کرپشن چوربازاری کا بازارگرم ہے اوراب حالات اتنے خراب ہوچکے ہیں جس کا کوئی حل نظر نہیں آتا ہماری اللہ پاک سے دعا ہے کہ اے اللہ ہم پر اپنا رحم کر!

یہ بھی پڑھیں  دیپالپور:ایکسئین واپڈا سید قربان علی شاہ اور ایس ڈی او طارق بشیر کی کھلی کچہری

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker