تازہ ترینکالممحمد مظہر رشید

لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ؟ عوام کی رائے

MUHAMMAD MAZHAR RASHEEDلوڈشیڈنگ ملک بھر کی اٹھارہ کروڑ عوام توانائی بحران کی عفریت میں مبتلا، ہر زدوعام توانائی بحران پر گفتگو کرتا نظرآرہا ہے کیا آنے والی حکومت ملک میں اٹھنے والے بجلی کے طوفان پر قابو پاسکے گی ’’آفتاب‘‘کے عوامی سروے میں مختلف طبقہ ہائے فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے گفتگو کرتے ہوئے کیا قاضی عبیدالرحمن نے کہا کہ توانائی بحران کوئی آج کا پیدا کردہ مسئلہ نہیں سابقہ حکمرانوں نے بجلی کی رسد اور کھپت کو مدنظر رکھتے ہوئے مناسب اقدام نہیں اٹھائے جس کی وجہ سے آج ہم توانائی بحران کی دلدل میں دھنستے چلے گئے مگر نوازشریف بحرانوں سے نبرد آزما ہونے کا ہنر بخوبی جانتے ہیں جو اپنی قابل اور کہنہ مشق ٹیم کے ہمراہ ملک و قوم کو توانائی بحران سے نجات دلائیں گے ملک ظفر اقبال نے کہا کہ ملک میں جاری توانائی بحران اس قدر سنگین ہوگیا ہے کہ جس سے فوری نجات حاصل ناممکن ہے مگر حکومت اس بارے میں سنجیدگی سے اقدامات اٹھائے تو خاطر خواہ کمی لائی جاسکتی ہے۔قوم کو بھی صبروتحمل کا مظاہرہ کرنا چاہیے عبدالستار نجمی نے کہا کہ شریف برادران نے انتخابی مہم کے دوران عوام سے لوڈ شیڈنگ کے خاتمہ کیلئے بھرپور انداز میں وعدے کرکے مینڈیٹ حاصل کیا اب ان وعدوں کی پاسداری کیلئے ذہنی طور پر تیار بھی رہے۔شہباز شریف کبھی چھ ماہ میں کبھی ڈیڑھ سال اور کبھی دو سال میں لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے متضاد بیان دیتے نظر آئے اب گزشتہ روز نوازشریف نے لوڈ شیڈنگ بحران کے خاتمے کا تین سال کا ٹائم فریم دیا ہے سابقہ حکمرانوں کی طرح آنے والے حکمران بھی ڈنگ ٹپاؤ پالیسی پر گامزن ہوئے تو لوڈ شیڈنگ کا بحران ختم نہیں ہو گا۔شیر خاں لودھی نے کہا لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ یقینی ہوسکتا ہے اگر آنے والی حکومت نیک ارادوں اور مضبوط قوت فیصلہ پر عمل کرنے کے ساتھ ساتھ عوام کو بھی اعتماد میں لائے عوام میں بھی لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کا شعور اجاگر کرنے کی ضرورت ہے غیر ضروری ترقیاتی کاموں کو معطل کرکے توانائی بحران کے خاتمے کیلئے ٹھوس اور مثبت منصوبہ بندی کرنے کی ضرورت ہے توانائی بحران کے خاتمے کے ساتھ ہی متعدد مسائل خود بخود حل ہوجائیں گے ۔ محمد وسیم نے کہا کہ لوڈ شیڈنگ بحران ملک و قوم کو دیمک کی طرح چاٹ رہا ہے جس کے خاتمے کے بغیر ترقی ناممکن ہے میاں نوازشریف کی حکومت قائم ہونے کے چار پانچ ماہ بعد اس بحران کے خاتمے کی سمت کا تعین ہوسکے گا ابھی تک تو عوام وعدوں اور نعروں کے چکر میں ہیں مگر امید ہے کہ نوازشریف اور شہباز شریف ضرور لوڈ شیڈنگ کے بحران سے قوم کو نکالیں گے۔عرفان اعجاز نے کہا کہ ابھی نوازشریف نے حکومت ہی نہیں سنبھالی اور عوام بڑی شدت سے توانائی بحران کے خاتمے کا انتظار کررہی ہے یہ سب کیا دھرا سابقہ حکومتوں کا ہے(ن) لیگ کی حکومت اگر توانائی بحران کا مکمل خاتمہ نہ کرسکی تو اس میں خاطر خواہ کمی ضرور لائے گی۔اعجاز احمد نے کہا کہ نوازشریف ملک سے لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ضرور چاہتے ہوں گے مگر خزانہ خالی اور ہاتھ خالی ہے جو اس بحران کے خاتمے کیلئے سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔قوم کو مزید قرضوں تلے دبا کر غیر ملکی امداد پر انحصار کیا جائے گا اگر حکمرانوں کی نیتیں ٹھیک ہوتی تو لوڈ شیڈنگ پر کافی حد تک قابو پایا جاسکے گا۔عوام کی اکثریت لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کیلئے کافی ناامید دکھائی دی۔اکثریت نے کہا کہ نوازشریف لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھا کر کامیاب ہوں گے مگر عوام ابھی تک وعدوں اور دعوؤں کی فیچر دیکھ رہے خدا کرے کہ وہ دن بہت جلد آئے جب ملک میں لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ہو اور ملکی معیشت کا پہیہ رواں دواں ہو۔روزگار کے مواقع کھلیں عوام خوشحال ہوں اور ملک ترقی کرے*note

یہ بھی پڑھیں  میڈیا پریس گروپ ڈسکہ کی طرف سے افطار پا رٹی کا انعقاد

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker