تازہ ترینعلاقائی

ضلع چنیوٹ میں لوڈ شیڈنگ کا جن بو تل سے باہرنکل آیا

چنیوٹ (بیورورپورٹ) ضلع چنیوٹ میں لوڈ شیڈنگ کا جن بو تل سے باہرنکل آیا گھروں ،دفاتر ، مساجد ، سکول و کالجز میں پینے کا ٹھنڈاپانی نایاب ہوگیا فیسکو سب ڈویژن چنیوٹ اوربھوآنہ نہ کوئی شیڈول نہ لوڈ پورا ،گھریلو استعمال کا سامان برباد ہو نے لگا پمپ پانی چھوڑ گئے ،گرڈ اسٹیشن پر موجود باہر کا عملہ اپنے ’’دوستوں ‘‘کو خوش کرنے میں مصروف ۔گرمی کا آغاز ہوتے ہی سب ڈویژن بھوآنہ میں شہری اور دیہاتی علاقوں کا فرق مٹ گیا بغیر شیڈول بجلی کی بندش معمول کی بات بن گئی کم وو لٹیج کی وجہ سے گھریلو استعمال کی اشیاء کا ؤئے روز خراب ہو نے سے گھر میں میاں بیوی کے درمیان جھگڑے عام ہو گئے بجلی کی بے وقت اور بغیر شیڈول بندش کی وجہ سے لوگ ذہنی مریض بنتے جا رہے ہیں ایک سروے کے مطابق چنیوٹ اور اس کے گرد و نواح میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ نے عوام کا جینا محال کر دیا ٹیلر ماسٹر ضیاء الرحمن نے کہا کہ حکومت کا وجود کہاں ہے ؟فضول کاموں پر سرمایہ لگایا جا رہے حکومت کو آئے ایک سال ہو گیا ہے مگر ابھی تک اس نے لوڈشیڈنگ جیسے عذاب سے ہمیں نجات نہیں دلائی اللہ دتہ نامی نوجوان نے بات کرتے ہوئے کہا شریف برادران نے الیکشن میں جو دل فریب نعرے لگائے تھے وہ کہاں گئے؟جو کہتے تھے کہ اتنے ماہ میں لوڈشیڈنگ ختم نہ کی تو میرا نام بدل دینا وہ سب کہاں ہیں ؟میٹرو منصوبوں کو آگ لگا نی ہے جب کھانے کو روٹی نہیں ہوگی تو میٹرو پر سفر کون کرے گا ؟ الیکشن کی وہ جذباتی باتیں آج خواب و خیال بن چکی ہیں چھوٹا بھائی جذباتی تقریریں کرتا ہے وت بڑا بھائی اس کو بھولے پن سے تشبیع دیتا ہے مگر عوام جس چیز کے لیے تڑپ رہی ہے اس کا کہیں وجود نہیں ہے عوام کا مزید کہنا تھا کہ شریف بردران منافق ہیں ان کے قول و فعل میں تضاد ہے یہ لوگ مشرف کو برا کہتے ہیں مگر اس کے دور میں ملک اندھیروں میں اس طرح نہیں ڈوبا تھا جیسے اب ہے بھوآنہ میں لوڈ شیڈنگ بغیر کسی اصول اور شیڈول کے جاری ہے کئی کئی گھنٹے بند رہنے کے بعد آدھے گھنٹے کے لیے شکل دکھانے کے بعد اگلے کئی گھنٹے پھر گائب ہو جاتی ہے عوامی حکومت کی دعوے دار شریفوں کی حکومت نے عوام سے جینے کا حق بھی چھین لیا اپنی تقریروں میں ملک کی قسمت بدل دینے کا دعویٰ کرنے والے عوام سے ان کے منہ کا نوالہ بھی چھین لین اچا ہتے ہیں ظالمانہ لوڈ شیڈنگ کی بڑے سخت انداز میں مذمت کی ہے اور کہا کہ گرڈ اسٹیشن پر باہر س تعینات لوگ شہر کی بجلی بند کر کے بیرون شہر فیڈرز چلا دیتے ہیں حالیہ چند دنوں میں جیسے جیسے گرمی نے زور پکرا ہے بجلی کی لوڈشیڈنگ میں ناقا بل برداشت حد تک اضافہ ہو گیا ہے جس کا نہ تو کوئی پیمانہ ہے نہ دستور جب مرضی ہوئی بجلی بند کر دی جب چا ہا چلا دی اگر بجلی خراب ہے اور ا سکو ٹھیک کر نے کے لیے عملہ جاتا بھی نہیں کئی گھنٹوں بعد جب بجلی ٹھیک ہو تی ہے تو پھر پانچ منٹ بعد غائب پوچھنے پر جواب ملتا ہے کہ پہلے خراب تھی اب شیڈول کی وجہ سے بند ہے جب کہ شیڈول ہے ہی نہیں بھوآنہ کی سول سوسائٹی ،سیاسی و سماجی حلقوں نے فیسکو حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ لوڈ شیڈنگ کا شیڈول جاری کیا جائے تا کہ لوگوں کو پتا ہو کہ کب بجلی بند ہوگی کب آئے گی اس کے مطابق اپنے کام سر انجام دے سکیں ۔

یہ بھی پڑھیں  نارووال:پنجاب حکومت کے پانچ سال مکمل ہونے پرتقریب

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker