پاکستانتازہ ترین

’’ لانگ مارچ کل داتا دربارسے شروع ‘‘ طاہرالقادری نے چارٹرآف ڈیمانڈ پیش کردیا

tahirلاہور(نمائندہ خصوصی) تحریک منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا ، لانگ مارچ زندگی اور موت کا مسئلہ ہے ، لانگ مارچ داتا دربار سے شروع ہوکر بری امام ختم ہوگا، ہمارا پہلا مطالبہ موجودہ الیکشن کمیشن کو تحلیل کرکے تشکیل نو کی جائے ، غیر سیاسی نگران حکومت قائم کی جائے ، الیکشن آرٹیکل 62،63 اور 218 کے تحت کرائے جائیں ، رحمان ملک نے براہ راست مجھے دھمکی دی ہے ، چیف جسٹس ازخود نوٹس میں گرفتار کرکے جیل میں ڈالا جائے ۔ لاہور منہاج القرآن مرکز میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ منہاج القرآن کا سربراہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا لانگ مارچ ہوگا اس سے پہلے ماؤزے تنگ کا سب سے بڑا مارچ تھا ہمارا لانگ مارچ ظلم ، جبر ، ناانصافی اور لٹیروں ، ڈاکو حکمرانوں کیخلاف ہوگا ۔ ہمارا لانگ مارچ کل اتوار کو صبح 9بجے داتا کی نگری سے شروع ہوگا اور بری امام میں پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے ختم ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ مارچ کو کسی مذاکرات کے ذریعے نہیں روکا جاسکتا مذاکرات کیلئے ایک نہیں ہزاروں افراد میرے پاس آئے ہیں لیکن اب ہمارے مذاکرات ہوں پارلیمنٹ کے سامنے ہوں گے عوامی مذاکرات کیلئے حکومت کے پاس وقت نہیں ہے اپنی سیاست کو بچانے کیلئے وقت ہوتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس بات کو تسلیم کرلیا جائے کہ حکومت امن وامان سمیت دیگر مسائل حل کرنے میں بری طرح ناکام ہوچکی ہے لہذا موجومدہ حکومت کا اقتدار میں رہنے کا کوئی جواز نہیں ۔ کوئٹہ میں 84 افراد کی میتیں دو روز سے سڑک پر پڑی ہیں وہاں حکمرانوں کو افسوس کرنے کا وقت نہیں ملا بلوچستان میں دہشتگردوں کا راج ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک کو لٹیروں اور ڈاکو حکمرانوں سے چھڑانے کا آخری موقع ہے اگر یہ موقع گنوا دیا گیا تو پھر پچھتاوا ہوگا ۔ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ رحمان ملک نے براہ راست ٹی وی چینل پر مجھے دھمکی دی ہے چیف جسٹس دھمکی کا ازخود نوٹس لیں اور انہیں گرفتار کرکے جیل میں ڈالے حکومت نے نہ تحفظ دیا ہے نہ کوئی حفاظتی انتظامات کرسکتی ہے۔ انہوں نے اپنے مطالبات پیش کرتے ہوئے پہلا مطالبہ یہ کیا ہے کہ حکومت الیکشن کمیشن کو تحلیل کرکے اس کی تشکیل نو کی جائے ، نگران حکومت مکا مکا سے نہیں بنے گی ، نگران حکومت تمام فریقوں کے ساتھ مشاورت کرکے بنائی جائے ۔ الیکشن آئین کے آرٹیکل 62،63 اور 218 کے مطابق کرائے جائیں اصلاحات کے بغیر جھرلو الیکشن ہوں گے اور غیر آئینی اور ان انتخابات میں ہر شخص خون کے آنسو روئے گا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بات واضح ہے کہ مذاکرات کے ذریعے لانگ مارچ کو نہیں روکا جاسکتا کوئی فیصلہ یا مذاکرات بند کمروں میں نہیں ہوگا جو ہوگا وہ عوام کے سامنے ہوگا ۔ اللہ کے حکم سے حکمرانوں کی اکڑی گردنیں جھکا دینگے

یہ بھی پڑھیں  چین‘ 16 سالہ لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے جرم میں ایک شہری کو پھانسی دے دی گئی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker