تازہ ترینعلاقائی

منڈی بہاوالدین:شہرمیں عطائیت کاکاروباراپنے عروج پرپہنچ گیا

mandi bahauddinمنڈی بہاوالدین(محمد بلال احمدبٹ) شہرمیں عطائیت کاکاروباراپنے عروج پر،ہڈی جوڑپہلوان ،عطائیت اورڈینٹل کلینک کے نام پردوکانیں کھولے بیٹھے انسانی جانوں سے کھیلنے کے مذموم کاروبارمیں ملوث عطائیوں کے خلاف مہم سیاسی دباوکاشکارہوگئی،محکمہ صحت کے ذمہ دارحکام کی پراسرارخاموشی سنجیدہ حلقوں کیلئے لمحہ فکریہ بن گئی،،تفصیلات کے مطابق شہرمیں عطائیت کامکروہ دھندہ ایک عرصہ سے انتہائی منظم طریقہ اورمحکمہ صحت کے ملازمین کے تعاون سے جاری ہے،اورگلی محلوں میں ایم بی بی ایس ڈاکٹرزکے بورڈآویزاں کرکے غیرمستعنداورنان کوالیفائیڈجعلی معالجین ملٹی نیشنل کمپنیوں کی ٹھیکہ کی ادویات فروخت کرکے کروڑپتی بن گئے ہیں،منشی محلہ،گوڈھامحلہ،صوفی پورہ،شفقت آباد،سکول محلہ،منظورآباد،طارق آباد،پنڈی بہاوالدین سمیت شہرکے گردونواح میں ان عطائیوں کے اڈوں کے خلاف محکمہ صحت کی جانب سے چشم پوشی کرتے ہوئے،آج تک انکے خلاف حقیقی معنوں میں کوئی موثرکاروائی عمل میں نہیں لائی جاسکی،اورنان کوالیفائیڈہڈی جوڑپہلوانوں کے ہاتھوں متعددافرادیاتوزندگی بھرکیلئے معزورہوگئے یاپھرزندگی کی بازی ہارگئے ،جبکہ شہرمیں مختلف مقامات پرنان کوالیفائیڈہومیواورڈینٹل ڈاکٹروں کی بھرمارنے شہرمیں ہپاٹائٹس بی سی سمیت متعدی امراض شہریوں کومنتقل کرنے کاگڑھ بن چکے ہیں،جہاں دانتوں کی سرجری سے لیکرانکے علاج معالجہ کیلئے ایلوپیتھی ادویات سمیت آلات جراحی کاکھلم کھلاغیرقانونی استعمال کیاجارہاہے،اوران آلات جراحی کوجراثیم سے پاک کرنے کاکوئی سانٹیفنک یامناسب انتظام دیکھنے میں نہیں آتا،جبکہ زنگ آلودآلات جراحی موذی امراض کے پھیلاؤکابڑاسبب بن چکے ہیں،شہرکے مرکزسمیت گلی محلوں میں جاری یہ مذموم کاروبارمحکمہ صحت کی کاکردگی پرایک سوالیہ نشان ہے،انجمن تحفظ حقوق شہریاں کے صدربابومحمدیامین ایڈووکیٹ کاکہناتھاکہ اعلی حکام کوسنجیدگی سے اس مسئلہ کے سدباب کیلئے محکمہ صحت اورڈرگ انسپکٹروں کی اصلاح احوال کیلئے فوری اقدامات کرنے چاہیں،

یہ بھی پڑھیں  منڈی بہاؤالدین:وزیراعلیٰ پنجاب نےضلع کیے پارٹی ٹکٹ کی تقسیم کیلئے کمیٹی تشکیل دے دی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker