تازہ ترینعلاقائی

مانسہرہ:رشتے کے تنازعہ پرپولیس نے 8افراد کے خلاف مقدمہ رجسٹر کرتے ہوئے دو نامزد ملزمان کو گرفتار کرلیا

مانسہرہ(بیورو رپورٹ)رشتے کے تنازعہ پر تھانہ سٹی مانسہرہ کی حدود کالج دوراہا میں انجمن تاجران مانسہرہ کے مرکزی سرپرست اعلیٰ حاجی چن زیب اور ان کے بھائی کے قتل کی رپورٹ پر پولیس تھانہ سٹی مانسہرہ نے 8افراد کے خلاف مقدمہ رجسٹر کرتے ہوئے دو نامزد ملزمان کو گرفتار کر لیا۔ جبکہ دیگر کی گرفتاری کے لئے چھاپوں کا سلسلہ شروع کر دیا۔ انجمن تاجران کے مرکزی سرپرست اعلیٰ اور انکے بھائی کی میت پوسٹمارٹم اور دیگر قانونی تقاضوں کی تکمیل کے بعد ورثاء کے حوالے کر دی گئی۔ مقتولین کو آبائی علاقہ میں نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد سپرد خاک کر دیا گیا۔ نماز جنازہ کے موقع پر امن و امان کو برقرار رکھنے اور کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کے لئے پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی۔ ابتدائی رپورٹ کے مطابق گذشتہ روز انجمن تاجران کے مرکزی سرپرست اعلیٰ اور ممتاز سماجی شخصیت حاجی چن زیب اپنے بھائی حاجی خالد، بیٹے عامر زیب اور دوست حاجی نذیر کے ہمراہ اپنے دفتر کالج دوراہا میں موجود تھے کہ سابق ناظم سٹی طاہر شاہ، سابق ناظم افتخار شاہ نے اپنے ساتھیوں نظام شاہ،شاہنواز، حنیف خان ، ماجد حسین ، مرتضیٰ شاہ اور عظمت شاہ نے بامسلح ان پر حملہ کر دیا اور حاجی چن زیب، ان کے بھائی حاجی خالد، بیٹے عمر زیب اور دوست حاجی نذیر کوگولیوں سے چھلنی کرنے کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔ واقعہ کی اطلاع پر حاجی چن زیب کے عزیز و اقرباء اور علاقہ کے لوگوں کی بڑی تعداد موقع پر پہنچ گئی۔ جنہوں نے زخمیوں کو فوری طبی امداد کی فراہمی کے لئے ہسپتال پہنچایا۔ ابتدائی طبی امداد کی فراہمی کے دوران حاجی خالد کنگ عبداللہ ہسپتال میں دم توڑ گئے جبکہ حاجی چن زیب ، ان کے بیٹے اور دوست کو طبی امداد کی فراہمی کے بعد ایوب میڈیکل کمپلکس ریفر کر دیا گیاجہاں حاجی چن زیب زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے راستہ میں ہی دم توڑ گئے۔ جبکہ دیگر زخمیوں کو ایوب میڈیکل ہسپتال میں طبی امداد کی فراہمی کے لئے داخل کر دیا گیا۔ حاجی چن زیب اور ان کے بھائی حاجی خالد کے قتل کی خبر سنتے ہی انجمن تاجران، ضلع انتظامیہ ، اعلیٰ حکام اور دیگر مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد ہسپتال پہنچ گئی۔ جہاں پوسٹمارٹم کے بعد دونوں بھائیوں کی نعشیں ورثاء کے حوالے کر دی گئیں۔ انجمن تاجران کے مرکزی سرپرست اعلیٰ حاجی چن زیب کے بیٹے عامر زیب کی رپورٹ پر پولیس نے آٹھ ملزمان کے خلاف دوہرے قتل کا مقدمہ رجسٹر کرتے ہوئے نامزد ملزمان میں سے دو ملزمان نظام شاہ اور ماجد حسین کو گرفتار کر لیا۔ جبکہ دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لئے پولیس نے چھاپوں کا سلسلہ شروع کر دیا۔ دریں اثناء مقتولین کی میتیں آبائی علاقہ بھیرکنڈ لے جائی گئیں۔ جہاں دونوں مقتولین کی نماز جنازہ سخت سیکورٹی میں ادا کی گئی ۔ اس موقع پر علاقے بھر کی فضاء سوگوار رہی اور رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button