پاکستان

میمو کمیشن:منصوراعجازکو9 فروری تک پیش ہونیکاآخری موقع

جسٹس فائز عیسٰی نے ریمارکس دیئے کہ اتنی یقین دہانیوں کے باوجود منصور اعجاز مطمئن نہیں تو درخواست بھی خارج کر سکتے ہیں، فریقین راضی ہوں تو کمیشن بیرون ملک بیان ریکارڈ کر سکتا ہے۔ میمو کے تحقیقاتی کمیشن نے منصور اعجاز کو 9 فروری تک پیش ہونیکا آخری موقع دیدیا ہے.جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے کہا کہ اعلیٰ حکومتی عہدیدار ایسے بیانات دے رہے ہیں جن سے حیرانی ہوتی ہے۔ حکومتی اہلکاروں کے لیے مناسب نہیں کہ وہ کمیشن کی کارروائی پر تبصرہ کریں۔ کمیشن نے اکرم شیخ کو ہدیات کی کہ وہ منصور اعجاز سے بات کرکے بتائیں کہ وہ کب پاکستان آسکتے ہیں، اس پر اکرم شیخ نے جواب دیا کہ وہ 2 فروری تک عمرے پر جارہے ہیں۔ اس سے پہلے جب کارروائی شروع ہوئی تو تحقیقاتی کمیشن نے ریمارکس دیئے کہ رحمان ملک غیر ضروری بیان دیتے ہیں، کیا وہ کمیشن ہیں یا وہ عدالتی اختیار رکھتے ہیں۔ ادھر کئی درخواست گزاروں نے منصور اعجاز کا بیرون ملک بیان ریکارڈ کرنے کی استدعا کی ہے۔ تاہم دوسری جانب میمو کمیشن نے منصور اعجاز کو 9 فروری تک پیش ہونے کا آخری موقع دیدیا ہے.

یہ بھی پڑھیں  این اے 125 دھاندلی کیس, 398 افراد نے ایک سے زائد ووٹ ڈالے: نادرا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker