پاکستانتازہ ترین

ماروی میمن کا لوگوں کےجذبات سےکھیلنا وطیرہ ہے،علی مدد جتک

کوئٹہ ﴿نمائندہ  خصوصی﴾ صوبائی  وزیر  مواصلات  اور  بلوچستان  اسمبلی  میں  پیپلز  پارٹی  کے ڈپٹی  پارلیمانی لیڈر علی مدد جتک نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی اور اس کی حکومت کوئٹہ میں ہزارہ برادری کی ٹارگٹ کلنگ کے واقعات کی روک تھام اور ذمہ دار عناصر کو کیفر کردار تک پہنچانے کا نہ صرف پختہ عزم رکھتی ہے بلکہ اس حوالے سے روز اول سے ٹھوس اور نتیجہ خیزاقدامات کررہی ہے جس سے کوئٹہ کے شہری بخوبی آگاہ ہیں اور وہ سستی شہرت کے خواہش رکھنے والے سیاسی لیڈروں کے ورغلانے میں نہیں آئیں گے جمعرات کو یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں انہوںنے مسلم لیگ﴿ن﴾ کی رہنمائ سابق رکن قومی اسمبلی ماروی میمن کے دورہ کوئٹہ کے موقع پر ہزارہ برادری کے رہنماؤں سے ان کے اور مسلم لیگ﴿ن﴾ کے قائد سابق وزیراعظم نواز شریف کے خطاب پر نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ ماروی میمن پارٹیاں بدلنے کی عادی ہیں اور صرف شہریت کے حصول کیلئے لوگوں کے جذبات سے کھیلنا ان کا وطیرہ ہے انہوں نے کہا کہ ماروی میمن کو پیپلز پارٹی اور اس کی حکومت پر تنقید کرنے سے پہلے عوام کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کے خلاف اس کی جدوجہد کی روشن تاریخ پر نظر ڈالنی چاہئے علی مدد جتک نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے عوام کو کبھی مشکل میں تنہا نہیں چھوڑا اور کوئٹہ میں ہزارہ برادری کی ٹارگٹ کلنگ کے ملزمان کی گرفتاری کیلئے بھی تمام وسائل بروئے کار لارہی ہے انہوں نے کہا کہ ماروی میمن ہم پر کس منہ سے تنقید کرتی ہیں انہیں یاد رکھنا چاہئے کہ ان کا لیڈر جیل کی صعوبتیں برداشت کرنے کے ڈر سے عوام کو غیر جمہوری قوتوں کے رحم و کرم پر چھوڑ کر ملک سے بھاگ گیا تھا انہوں نے کہا کہ عملی مسائل کا سامنا کرنا اور عوام کے ساتھ مل کر مشکلات میں کھڑے رہنے کا پیپلز پارٹی سے زیادہ کسی کو پتہ نہیں صوبائی وزیر نے رخسانہ احمد علی کی جانب سے حکومت پر کی جانے والی تنقید پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مذکورہ خاتون کو پارٹی نے سینٹ کا ٹکٹ نہیں دیا اس لئے وہ آج پارٹی اور اس کی حکومت کے خلاف ہرزہ سرائی کررہی ہیں علی مدد جتک نے کہا کہ میاں صاحب کوئٹہ میں ٹارگٹ کلنگ کے وااقعات کے دوران خود آکر صورتحال کا سامنا کرتے اور قیام امن کی کوششوں میں ہاتھ بٹاتے تو جمہوری حلقوں کی طر ف سے خیر مقدم کیا جاتا لیکن پیپلز پارٹی اور حکومت کی کوششوں کے نتیجے میں قیام امن کے بعد ٹیلی فون کے ذریعہ اظہار تعزیت کرکے اور ماروی میمن جیسی متلون مزاج سیاسی کارکن کو یہاں بھیج کر ہزارہ برادری کی ہمدردی حاصل کرنے کی کوشش ملک کی بڑی سیاسی جماعت اور اپوزیشن کو زیب نہیں دیتی۔

یہ بھی پڑھیں  بھائی پھیرو:تیزرفتاربس نےٹکرمارکرسڑک کراس کرتے ہوئے شخص کوہلاک کردیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker