شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / بھائی پھیرو:مردار،مضر صحت اور پانی ملے گوشت کی سر عام فروخت

بھائی پھیرو:مردار،مضر صحت اور پانی ملے گوشت کی سر عام فروخت

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو میں مردار،مضر صحت اور پانی ملے گوشت کی سر عام فروخت۔موزی امراض پھیلنے کا خطرہ،قصاب گھروں میں جانور ذبح کرنے لگے۔ریٹ لسٹیں آویزاں نہ کرکے قصائی گاہکوں سے منہ مانگی قیمت وصول کرکے شہریوں کی کھال اتارنے لگے۔حکام نے حقائق کاعلم ہونے کے باوجود آنکھیں بند کر لیں تاجر رہنماؤں کا شدید احتجاج۔تفصیلات کے مطابق بھائی پھیرو میں قصابوں نے من مانی کی انتہا کرتے ہوئے پانی ملے اور مردار گوشت کی سر عام فروخت شروع کر رکھی ہے مگر انہیں پوچھنے والا کوئی نہیں ہے۔ قصاب جانور ذبح کرنے کے بعد اسکے دل کی بڑی نالی میں پریشر کے ذریعے پانی جانور کے گوشت میں داخل کرتے ہیں جس سے ہپا ٹائٹس،گیسٹرواور دیگر امراض جنم لے رہے ہیں۔ قصاب ناقص اور نیم مردہ جانوروں کو گھر میں خفیہ جگہوں پر ذبح کرکے متعلقہ افسران سے مک مکا کرکے شہریوں کو ناقص اور مضر صحت گوشت کھلا کر عوام کی زندگیوں سے کھیل رہے ہیں۔گوشت کو کھلے عام رکھا جاتاہے جس سے گوشت پر ہر وقت مکھیوں کے چھتے بھنبھنا تے رہتے ہیں۔ قصائیو ں نے اپنی دوکانوں پر ریٹ لسٹیں آویزاں نہیں کیں جس وجہ سے وہ گاہکوں سے من مانی قیمتیں وصول کرکے گاہکوں کی کھال اتارتے ہیں۔انجمن تاجراں کے تنویر اورمقبول و ر دیگر رہنما ؤں نے ڈی سی او قصور سے مطالبہ کیا ہے کہ ان قصابوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے، شہر میں پانی ملے گوشت کی فروخت بند کی جائے، قصابوں کو گوشت کے گرد جالیاں لگانے کا پابند بنایا جائے، قصائیوں کو ریٹ لسٹیں آویزاں کر نے کا پابند بنایا جائے اور گاہکوں کی کھال اتارنے سے منع کیاجائے

یہ بھی پڑھیں  ایس ایچ اوتھانہ گگومنڈی کی معطلی کےخلاف مقتول بچونکے ورثا کااحتجاج