علاقائی

رائے ونڈ:دولاکھ عوام مردار ،مضر صحت گوشت کھانے پر مجبور

رائے ونڈ ﴿ کرائم رپورٹر﴾ علامہ اقبال ٹائون کے راشی افسران کی غفلت کے باعث رائے ونڈ کے دولاکھ عوام مردار ،مضر صحت گوشت کھانے پر مجبور ،چار سالوں سے سلاٹر ہائوس چالو نہ ہونے سے قصابوں نے گھروں میں جانور ذبح کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے ، ایک کروڑ کی کثیر لاگت سے تعمیر ہونے والا سلاٹر ہائوس مٹی کے ڈھیر میں تبدیل ہونے کا خدشہ ۔تفصیلات کے مطابق اقبال ٹائون کے راشی اور کمیشن خور افسران کی مجرمانہ غفلت سے چار سالوں سے تعمیر ہونے والا سلاٹر ہائوس قصابوں کے لئے کھولا نہیں گیا ذرائع کے مطابق سلاٹر ہائوس کا ٹھیکہ لیگی عہدیدار نے لینے کے بعد منصوبے پر کام بند کر دیا مقامی صحافیوں نے سلاٹر ہائوس کی عدم تعمیر کے بارے خبریں شائع کیں جسکے بعد سلاٹر ہائوس کی تعمیر دوبارہ شرع کردی گئی عرصہ دو سال سے سلاٹر ہائوس تیار ہونے کے باجود قصابوں کیلئے نہیں کھولا گیا جسکے باعث رائے ونڈ کی دولاکھ عوام مردار ،مضر صحت گوشت کھانے پر مجبور ہیں مقامی قصاب ویٹرینری ڈاکٹر کوخاطر میں لائے بغیر ہفتہ وار ناغوں کی سرعام خلاف ورزی کرنے سمیت مضر صحت اور لاغر جانوروں کا گوشت دیدہ دلیری سے فروخت کررہے ہیں ذرائع کے مطابق اقبال ٹائون کے راشی افسران نے اپنی غفلت اور کرپشن کو چھپانے کیلئے ابھی تک سندر روڈ سلاٹر ہائوس کو آپریشنل نہیں کیا چار سالوں سے سلاٹر ہائوس کی مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کیوجہ سے سلاٹر ہائوس بھوت بنگلے میں تبدیل ہو رہا ہے ادھر قصابوں کا کہنا ہے کہ ہمیں سلاٹر ہائوس کی ضرورت ہے لیکن اقبال ٹائون انتظامیہ اسکو ہمارے لئے کھول دے تو ہم جانور سلاٹر ہائوس میں ذبح کرنے کو تیار ہیں سلاٹر ہائوس ٹھیکیدار کی مبینہ کرپشن کے خلاف مقامی سماجی حلقوں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ عوام کے کروڑوں روپے کو شیر مادر سمجھنے والے عناصر کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لاتے ہوئے سندر روڈ سلاٹر ہائوس کو کھولا جائے تاکہ اہالیان علاقہ کو صحت مند اور معیاری گوشت کی فراہمی ممکن ہو۔

یہ بھی پڑھیں  شیخوپورہ محرم الحرام کے سلسلے میں سیکورٹی کے سخت انتظامات

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker