تازہ ترینعلاقائی

چک نمبر20ون اے ایل رینالہ خورد میں وزیر اعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت میگا فارمر ڈے

اوکاڑہ (محمد مظہررشید چودھری سے )ڈائریکٹر زراعت تو سیع ساہیوال ڈویژن چوہدری فاروق جاوید نے کہا ہے کہ جدید مشینری کے استعمال سے دھان اور دیگر فصلوں کی باقیات کو زمین میں ملانے سے نہ صرف سموگ سے بچاﺅ ممکن ہے بلکہ زمین کی زرخیزی اور پیداواری صلاحیت میں بھی اضافہ ہوتا ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے چک نمبر20ون اے ایل رینالہ خورد میں وزیر اعظم پاکستان کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت میگا فارمر ڈے برائے تیل دار اجناس کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر پی ٹی آئی ٹکٹ ہولڈر مہر محمد جاوید ،اسسٹنٹ کمشنر ضحیٰ شاکر ،ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت توسیع چوہدری شہباز اختر سمیت کاشتکاران کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔اس موقع پر ڈائریکٹر زراعت تو سیع ساہیوال ڈویژن چوہدری فاروق جاوید اور ڈپٹی ڈائریکٹر زراعت توسیع چوہدری شہباز اخترنے خطاب کرتے ہوئے زمینداروں پر زور دیا کہ وہ جدید زرعی مداخل اپنائیں ۔گند م اور تیل دار اجناس کے لئے محکمہ سے منظور شدہ اقسام کو پھپھوندی کش زہر لگا کر کاشت کریں۔انہوں نے پوٹاش والی کھادوں کے استعمال پر خصوصی زور دیا انہوں نے کہا کہ دھان اور دیگر فصلات کی باقیات کو بذریعہ ٹربو سیڈر اور رائس سٹرا چاپر زمین میں ملانے سے نہ صرف سموگ سے بچاﺅ ممکن ہے بلکہ زمین کی زرخیزی اور پیداواری صلاحیت میں بھی اضافہ ہوتا ہے اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر ضحی شاکر نے زمینداروں پر زور دیا کہ وہ فصلوں کی باقیات کو ہر گز آگ نہ لگائیں انہوں نے کہا کہ باقیات جلانے سے پیدا ہونے والے دھوئیں سے سموگ بنتا ہے جو نہ صرف انسانوں اور جانوروں کے لئے نقصان دہ ہے بلکہ فصلوں اور زمین کی صحت پر بھی منفی اثرات ڈالتا ہے ۔دیگر مقررین نے گندم کی فصل اور تیل دار اجناس خصوصاََ کنولا کے جدید پیداواری تیکنیکی عوامل و مداخل پر روشنی ڈالی٭

یہ بھی پڑھیں  چنیوٹ :’’اراضی اپنے نام منتقل کیوں کروائی ‘‘ سسرالیوں کا خاتون پرڈنڈوں، بیلچوں سے تشدد مار مار کرادھ منوا کردیا

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker