پاکستانتازہ ترین

وزیراعظم فضل الرحمان کو منانے ان کے گھر پہنچ گئے

اسلام آباد(بیوروچیف) وزیراعظم مولانا فضل الرحمان کو منانے ان کے گھر پہنچ گئے، کہتے ہیں سیاسی لڑائیاں عدالت میں نہیں میدان میں لڑتے ہیں، بجلی کے مسئلے کا حل، نئی ملازمتیں بجٹ کی پہلی ترجیح ہے۔ اہم قومی معاملات اورامور پراتحادی جماعتوں کے ساتھ ساتھ اپوزیشن کوبھی ساتھ لے کرچلنا چاہتے ہیں۔ پارلیمنٹ کاتقدس برقراررہنا چاہئے۔ اسلام اباد میں مولانا فضل الرحمن سے ملاقات کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ بجٹ میں روزگار کی فراہمی ،توانائی کے بحران کاحل اوربے نظیرانکم سپورٹ پروگرام کے زریعے غریبوں کی امداد ان کی ترجیحات کاحصہ ہیں۔ وزیراعظم گیلانی نے کہا کہ حکومت کے پاس دوتہائی اکثریت موجود ہے اختلافات عدالتون کی بجائے پارلیمنٹ میں دور کئے جانے چاہیں۔ وزیراعظم کاکہناتھاکہ اپوزیشن کےساتھ ورکنگ ریلیشن شپ قائم کرنا چاہتے ہیں چوہدری نثارعلی خان کوبھی منانے کی کوشش کریں گے۔ ایک سوال پروزیراعظم کاکہناتھا کہ میاں نوازشریف اورعمران اگراکھٹے ہوگئے توانھیں خوشی ہوگی اوریہ دونوں جماعتیں ایک دوسرے کی دیکھا دیکھی عدالت میں گئیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ کمزورلوگ عدالتوں میں جاتے ہیں اوروہ میدان میں لڑنے والے ہیں۔ ایک سوال پرانھوں نے کہا کہ وقت سے قبل انتخابات سے کیا بحران ختم ہوجائیں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ملک مین کوئی سیاسی قیدی نہیں اورانھوں نے ماضی سے سبق سیکھا ہے۔ مولانا فضل الرحمن نے اس موقع پرمیڈیا سے گفتگو میں کہا کہ آئین کی عملداری اورجمہوریت کے فروغ کیلئے کئے جانیوالے اقدامات کی حمایت کرتے ہیں اوروزیراعظم کیخلاف عدالتی معاملات میں فریق نہیں بننا چاہتے عدالتوں کے فیصلے کاانتظا رکرنا چاہتے ہیں۔ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ وزیراعظم سے ملاقات میں انھوں نے ترقیاتی اسکیموں کے فنڈز کامعاملہ بھی اٹھا یا جس کے لئے وزیراعظم نے بجٹ میں فنڈزمختص کرنے کی یقین دھانی کرائی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  شکاگو میں صدر زرداری کے ساتھ اچھوتوں والا سلوک ہوا، قریشی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker