سائنس و آئی ٹی

مفت ایپلی کیشنز ، موبائل فون بیٹری کی دشمن

امریکی ریاست انڈیانا میں واقع Purdue University کی ایک ریسرچ ٹیم نے حال ہی میں ایک رپورٹ جاری کی ہے جسکے مطابق اینڈرائیڈ سمارٹ فونز میں بیٹری جلدی ختم ہونے کی سب سے بڑی وجہ مفت ایپلی کیشنز ہیں۔ ریسرچ ٹیم کے سربراہ ابی ناؤ پھاٹک اور ان کی ٹیم نے اس مقصد کے لیے گوگل پلے سٹور سے اینگری برڈز سمیت بہت سے مفت ایپلی کیشنز کو مختلف فونز پر آزمایا۔ ریسرچ ٹیم کے مطابق یہ مفت ایپلی کیشنز اصل کام کرنے کے لیے صرف 20 سے 35 فیصد تک بیٹری استعمال کرتی ہیں جبکہ باقی قوت اشتہارات دکھانے اور صارفین کا ڈیٹا ریکارڈ کرنے میں ضائع ہوتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  مسمی کے جوس کااستعمال امراض قلب اور بلڈ پریشر کیلئےمفیدہے

آج کل کم و بیش تمام کمپنیوں کی جانب سے تیار کردہ نئی ایپلی کیشنز میں صارفین کا ڈیٹا ریکارڈ کیا جاتا ہے ، جسکے لیے کافی بیٹری خرچ ہوتی ہے، اسی طرح مفت ایپلی کیشنز میں اشتہارات کی بھرمار ہوتی ہے،جو بیٹری جلد ختم ہوجانے کی ایک بڑی وجہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  نئی موبائل سم نادرا سے تصدیق کے بعد جاری ہوگی

اسکے مقابلے میں جو ایپلی کیشنز آپ نے خریدی ہوتی ہیں ان میں نہ تو اشتہارات ہوتے ہیں اور نہ ہی وہ صارفین کا زیادہ ڈیٹا اکٹھا کرتی ہیں۔ ریسرچ ٹیم نے بہت سی ایپلی کیشنز کو دوبارہ لکھ کر انکا بیٹری کا استعمال حیرت انگیز طور پر کم کر دیا۔

یہ بھی پڑھیں  اسرائیل نے جاسوس تتلی تیار کرلی

امید ہے کہ اب سمارٹ فونز کے لیے ایپلی کیشنزبنانے والی کمپنیاں بھی اس ریسرچ سے فائدہ اٹھائیں گی اور نئے آنے والے ورژنز میں بیٹری کا استعمال کم ہوگا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker