پاکستانتازہ ترین

عمران خان جوش خطابت میں پرہیزکریں جوبعد میں ان کیلئے نقصان دہ ہوں،مفتی محمد نعیم

mufti muhammad naeemکراچی (نمائندہ پاک نیوز لائیو) جامعہ بنوریہ عالمیہ کے مہتمم وشیخ الحدیث مفتی محمد نعیم نے چئیرمین تحریک انصاف عمران خان کاقائدجمعیت مولانافضل الرحمن کی آڑلیکر علما ئے کرام کے بارے میں گستاخانہ الفاظ استعمال کرنے کی شدیدمذمت کرتے ہوئے ان کومشورہ دیاہے انتخابی مہم کے دوران عمران خان جوش خطابت میں ان الفاظ کے استعمال سے پرہیزکریں جوبعد میں ان کیلئے نقصا ن دہ ہوں۔ہم جے یوآئی کے کارکن ہیں اورنہ ہی ان کادفاع کرناچاہتے ہیں مولانافضل الرحمن کی رائے سے ہمیں بھی ہوسکتا ،لیکن مولانافضل الرحمن عالم دین ہیں اور عمران خان جے یوآئی قائدپرتنقیدکرتے ہوئے حدسے تجاوزنہ کریں اور یہ ضروریادرکھیں کہ علماء انبیاکرام کے علمی وارث ہیں۔ پیرکوجامعہ بنوریہ عالمیہ سے جاری بیان میں مفتی محمدنعیم نے انتخابی مہم کے دوران سیاستدانوں کی جانب جلسے جلوس اورٹی وی انٹرویوکے دوران ذاتیات پرکیچڑاچھالنے پرشدیدافسوس کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ مستقبل کے حکمران اخلاقیات اورتمیز سے عاری ہیں، سیاسی قائدین کویادرکھناچاہئے کہ ملک میں موجودتما م سیاسی جماعتوں اورقائدین کے مابین سیاسی ونظریاتی اختلافات ہوتے ہیں اگریہ اختلافات نہ ہوں توپھرالگ سیاسی جماعت اورتنظیم بنانے کاکیامطلب ہے،اوراختلافات کا مطلب بھی یہ ہرگزنہیں کہ اقتدارکے حصول کیلئے ایک دوسرے کے ذاتیات پرحملے کئے جائیںیہ اخلاقیات سے گری ہوئی حرکت اورمنفی وبیمارذہنیت کی عکاس ہے جبکہ دوسری طرف ہمارادین اسلام بھی اس کی ہرگز اجازت نہیں دیتاہے ۔انہوں نے تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان کی جانب سے انتخابی جلسوں کے دوران جے یوآئی قائدمولانافضل الرحمن اوران کی آڑمیں علماکرام کے بارے میں نازیباالفاظ کے استعمال کی شدیدمذمت کرتے ہوئے کہاکہ عمران خان اپنی حدودسے تجاوزنہ کریں اورسوچ سمجھ کربیانات دیں، عمران خان جے یوآئی قائدپرتنقیدکریں لیکن حدمیں رہتے ہوئے کیونکہ مولانافضل الرحمن عالم دین ہیں اورحضور ﷺ کافرمان مبارک کامفہوم ہے کہ علماء انبیاکرام کے علمی وارث ہیں اس لئے ان کوعمران کایہ عمل ان کیلئے انتخابات سمیت دنیاوآخرت میں نقصاندہ ہوگا۔انہوں نے مزیدکہاکہ سیاسی جماعتوں کے قائدین اورکارکن قائدجمعیت مولانافضل الرحمن سے اختلا ف توکرسکتے ہیں لیکن ان کے علمی وسیاسی بصیرت سے انکارنہیں اور ملک کے تمام بڑے سیاسی لیڈرمولانافضل الرحمن کوسیاست میں اپناامام مانتے ہیں جبکہ عمران خان توسیاست میں مولاناکے سامنے طفل مکتب ہیں۔مفتی محمدنعیم نے ایک مرتبہ پھرتمام سیاسی جماعتوں سے اپیل کی کہ سیاسی ونظریاتی اختلافات اپنی جگہ لیکن اس کایہ مطلب ہرگزنہیں کہ اقتدارکے حصول کیلئے ایک دوسرے کے ذاتیات پرکیچڑاچھالنے سے پرہیزکیاجائے ۔

یہ بھی پڑھیں  ملعون امریکی پادری کادوبارہ قرآن کریم کی بیحرمتی کااعلان تشویشناک ہے ،مفتی محمدنعیم

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker