پاکستانتازہ ترین

اداروں میں ٹکراؤ کی صورت میں ملک اور قوم کا نقصان ہو گا،مشاہد حسین

لاہور﴿ پریس ریلیز﴾ پاکستان مسلم لیگ کے سیکرٹری جنرل سینیٹر مشاہد حسین سید نے کہا ہے کہ قیادت بالغ نظری کا مظاہرہ کرے ، اداروں میں ٹکرائو کی صورت میں ملک اور قوم کا نقصان ہو گااور کسی جنرل آئندہ خان کو اقتدار میں آنے کا موقع ملے گا، سپریم کورٹ کے فیصلوں پر مکمل عمل ہونا چاہیئے ،خاکی یا مفتی میں سپریم کورٹ کا احترام ،قانون کی بالادستی ،اقتدار کی کرسی سے بالاتر سمجھی جانی چاہیئے ،اگر کسی نے مارچ کرنا ہے تو مہنگائی،دہشت گردی اور توانائی کے بحران کے خلاف کرے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوںنے نظریہ پاکستان ٹرسٹ میں معروف سکالر مواحد حسین شاہ کی کتاب ’’Will and Skill‘‘کی تقریب رونمائی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب کی صدارت ممتاز سینئر صحافی مجید نظامی نے کی جبکہ تحریک پاکستان کے ممتاز راہنما اور صاحب کتاب کے والد کرنل﴿ر﴾ سید امجد حسین خصوصی طور پر تقریب میں شریک ہوئے ۔تقریب سے سینیٹر ایس ایم ظفر ،چوہدری جاوید الٰہی،ڈاکٹر اجمل نیازی،معروف کرکٹر امتیاز احمد،رانا اعجاز خان ،سید فقیر حسین بخاری،ڈاکٹر رفیق احمد،فر خ سہیل گوندی ،حفیظ اللہ نیازی، ناصر ادیب ، آمنہ الفت ، ایم اے صوفی اور دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا ۔مشاہد حسین سید نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ماضی کی غلطیاں نہ دھرائی جائیں ۔77۔ 99اور 2009کے واقعات کو فراموش نہ کیا جائے اور سپریم کورٹ کے فیصلوں کو اہمیت دی جائے ۔انہوںنے کہا کہ ہم نے مطالبہ کیا تھا کہ تعلیم ،توانائی اور معیشت کے تین نکاتی ایجنڈے کو سامنے رکھ کر 2سال کے لئے سیاسی سیز فائر کیا جائے ۔مشاہد حسین سید نے کہا کہ مارچ2009  میں پنڈی سے آنے والی ایک کال پر لانگ مارچ ختم کر دیا گیا تھا اب بھی 30اپریل کو دی جانے والی وارننگ کو مدنظر رکھا جائے ۔انہوںنے کہا کہ خطے کے حالات بدل رہے ہیں ،امریکہ نے 2024تک افغانستان میں فوجیں رکھنے کا اعلان کیا ہے کہ جس کے پاکستان پر منفی اثرات مرتب ہوں گے ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوںنے کہا کہ تمام فریقین صبر وتحمل کا مظاہرہ کریں اور قانون کی حکمرانی کو یقینی بنائیں ۔تقریب رونمائی سے خطاب کرتے ہوئے مشاہد حسین سید کا کہنا تھا کہ قومی سلامتی کے حوالے سے کبھی سمجھوتہ نہ کیا جائے ،قوم میں کرنٹ اور جان ہے ،ہمت اور حوصلے کے ساتھ نظریاتی جنگ میں امت مسلمہ کی ترجمانی کرنی ہو گی ۔ممتاز سینئر صحافی مجید نظامی نے کہا کہ نظریہ پاکستان کے تحفظ کے لئے کہ وہ ہمیشہ اقدامات کرتے رہیں گے ۔کرنل ﴿ر﴾ امجدحسین کا گھرانہ سچا پاکستانی اور نظریاتی مسلم لیگی ہے جنہوںنے ہمیشہ پاکستان اور عالم اسلام کے لئے آواز بلند کی ۔ سینیٹر ایس ایم ظفر نے کہا کہ معاشرے کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ قانون کی حکمرانی کو یقینی بنائے ، انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے میں ایک جج کے ریمارکس میں پوری قوم کو جھنجھوڑا گیا ہے ، اگر ہم نے ہوش نہ کی تو یہ نام نہاد جمہوریت ختم ہو جائے گی ۔چوہدری پرویز الٰہی کے بھائی اور ممتاز سماجی راہنما چوہدری جاوید الٰہی نے کہا کہ مواحد حسین شاہ کی کتاب سے مغرب کی غلط فہمیاں دور ہوں گی ،میڈیا نظریاتی سرحدوں کی حفاظت کرے اور ایجنسیوں کو پارلیمنٹ اور ٹی وی مذاکروں میں زیر بحث لانے سے گریز کیا جائے ، اس سے قومی سلامتی کے امور کو نقصان پہنچے گا ۔انہوںنے کہا کہ سکولوں ، کالجوں اور ہر تقریب میں قومی ترانے کو لازمی قرار دیا جائے ،انہوںنے کہا کہ سونامی کی بات کرنے والے اپنے گھروں اور ذات میں سونامی لائیں اور اخلاقی اقدار کو بہتر بنائیں۔

یہ بھی پڑھیں  لاہور:غیرت کے نام پر بہن اور بہنوئی کو قتل کرنے کے جرم میں دو بھائیوں کو سزائے موت کا حکم

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker