پاکستانتازہ ترین

نیب نے کرپشن میں ملوث افراد سے 50 ارب روپے کی ریکوری کی

اسلام آباد(بیورو رپورٹ) چیئرمین نیب قمر الزمان چوہدری نے کہا ہے کہ نیب کی موجودہ انتظامیہ نے کرپشن میں ملوث افراد سے 50 ارب روپے کی ریکوری کرکے قومی خزانے میں جمع کرائے گئے ہیں جو موجودہ نیب انتظامیہ کی نمایاں کامیابی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کو 2014ء کے مقابلہ میں 2017ء کے دوران دوگنا شکایات، انکوائریاں اور انوسٹی گیشن موصول ہوئی ہیں، نیب واحد انٹی کرپشن ادارہ ہے جس نے دس ماہ کے قلیل عرصہ میں تیز رفتاری سے وائٹ کالر جرائم کیسوں سمیت تمام کیسوں کو نمٹایا ہے۔ انہوں نے ہفتہ کو یہاں نیب ہیڈ کوارٹر میں نیب کی مجموعی کارکردگی کا جائزہ لینے کی غرض سے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ چیئر مین نیب نے کہا کہ نیب کو سرکاری اور نجی تنظیموں کی جانب سے مجموعی طور پر 343356 شکایات موصول ہوئیں۔ نیب کی موجودہ انتظامیہ نے 11581 کی تصدیق، 7587 کی انکوائری، 3846 کی انوسٹی گیشن اور احتساب عدالتوں میں 2808 کرپشن کے ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی۔ چیئر مین نیب نے کہا کہ نیب نے کیسوں کو جلد از جلد نمٹانے کی غرض سے پراسیکیوٹرز اور انوسٹی گیشن افسران کی سہولت کیلئے نیب ہیڈ کوارٹر اور تمام علاقائی دفاتر میں لائبریریاں بھی قائم کی ہیں۔ انہوں نے کہ کہ نیب ہیڈ کوارٹر میں ای۔ لائبریری بھی قائم کی گئی ہے جہاں لاء جرنلز سے متعلق پچاس ہزار سے زائد الیکٹرانک کتابیں دستیاب ہیں۔ اسکے علاوہ نیب کا ہائیر ایجوکیشن کمیشن کی لائبریری تک رسائی کا بھی منصوبہ ہے۔انہوں نے کہا کہ نیب نے اپنے ہیڈ کوارٹر اور تمام علاقائی دفاتر میں انتہائی موثر مانیٹرنگ اور ایوالیوایشن سسٹم قائم اور اس پر عملدرآمد کیا ہے۔ قبل ازیں پراسیکیوٹر جنرل احتساب نے اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ پراسیکیوٹر ڈویژن نیب کی آپریشن ڈویژنز اور تمام علاقائی دفاتر کو قانونی رائے اور تعاون کی فراہمی کے علاوہ نیب کا اہم ڈویژن ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker