پاکستانتازہ ترین

سپریم کورٹ ازخود نوٹس لیکرکمپیوٹرائزڈشناختی کارڈ کی فیس ختم یا کم کرائے،ووٹرزالائنس پاکستان

کراچی ( پ ر) نادراحکام کی جانب سے عوام کو مفت کمپیوٹرائزدڈ شناختی کارڈکے اجراء کا سلسلہ ختم کر کے اسکی فیس1500/= روپے مقرر کیا جانا پاکستان کے غریب بالخصوص دو وقت کی روٹی تک کو ترسنے والے عوام پر بدترین ظلم ہے کیونکہ ملک میں شدید مہنگائی اورقلیل آمدنیوں کی وجہ سے ملک کے 98 فیصد غریب اور درمیانے درجے کے سفید پوش طبقے کی مالی و معاشی حالت اسقدر ناگفتہ بہ ہو چکی ہے کہ وہ مالی وسائل نہ ہونے کی وجہ سے اب بچوں کو روزانہ کا جیب خرچ دینے اور عزیز و اقاب کی خوشی و غمی میں آمد و رفت کے اخراجات اورتحفے تحائف خریدنے کیلئے رقوم نہ ہونے کی وجہ سے شرکت تک سے کترانے لگے ہیں ،ایسی حالت میں وہ اپنے گھرانے کے افراد کے کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ بنوانے کیلئے مبلغ 1500/- روپے فی کس طرح ادا کرینگے۔ لہذا نادرا حکام کمپیوٹرائزڈ شناخی کارڈ کی فیس مبلغ 1500/- مقررکرنے کافیصلہ فور ی طور پر واپس لینے کا اعلان کریں بہ صورت دیگر سپریم کورٹ کو چاہئے کہ وہ غریب عوام کیساتھ ہونے والی اس زیادتی کا ازخود نوٹس لیکرعوام کو نادرا کے ظلم سے نجات دلائے، نادرا حکام ہر پاکستانی کو کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈپہلی بار مفت یا انتہائی کم فیس کے عوض جاری کریں اور اسکے بعد کسی بھی صورت میں دوبارہ اجرا ء کیلئے مبلغ 100/-روپے اور ارجنٹ اجراء کیلئے صرف 250/- روپے سے زیادہ فیس نہ لیں تاکہ ملک کی اکثریتی آبادی کمپیوٹرائزاڈ شناختی کارڈآسانی سے بنوا کر اہم اور بنیادی قانونی تقاضا پور ا کر سکے لیکن اگر نادرحکام فیس ختم یاکم نہ کریں تو محترم چیف جسٹس آف پاکستان جو عوام کے محافظ ہیں نادرحکام کیخلاف از خود نوٹس لیکرشناختی کارڈ کیلئے مقرر کردہ مبلغ 1500/- کی بھاری فیس ختم کرائیں اور عوام کو ریلیف دلائیں۔ ان خیالات کا اظہار ملک بھر کے ووٹرز(انتخابی رائے دہندگان) کے اتحاد اور نمائندگی کی واحد ملک گیر تنظیم ’’ ووٹرز الائنس پاکستان‘‘ کے بانی و مرکزی چیئرمین جمیل اقبال سیّد نے الائنس کے تحت مرکزی سیکرٹریٹ ’’ پرسنٹ 98 عوام خدمت مرکز‘‘ میں منعقدہونے والے ایک اہم اجلاس سے اپنے صدارتی خطاب میں کیا ۔ اجلاس میں الائنس کے دیگر مرکزی رہنما اللہ دتہ قریشی، شکیل ملک، سید شجاع احمد، ارشد ندیم، راؤصولت علی خان، زاہد منیر اور دیگر بھی موجود تھے۔ مقررین نے کہا کہ نادرحکام ا کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ بنانے کیلئے اپنی کارکردگی کو بھی بہتر بنائیں کیونکہ جب سے انہیں ووٹر لسٹوں کا کام ملا ہے انہوں نے عوام کے شناختی کارڈ بنانا چھوڑ دئیے ہیں اور مفت یا کم فیس کے عوض شناختی کارڈ بنانے کے سلسلے میں خوساختہ رکاوٹیں پیدا کر کے مبلغ 1000/- روپے فیس کے عوض شناختی کارڈز جاری کر رہے ہیں جس کی وجہ سے غریب عوام کی بڑی تعداد قومی کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈز سے محروم ہے یا اسکے حصول میں اسے بد ترین دشواریوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ، انہوں نے کہا کہ اگر فیس کی زیادتی اوراپنی معاشی مجبوریوں کی وجہ سے کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ نہ بنونے کا سلسلہ چل نکلا تو یہ نہ صرف لمحہ فکریہ اور جمہوری دور حکومت میں ایک بہت بڑا تازیہ ہو گا بلکہ اس سے ملک میں لاقانونیت اور جرائم میں اضافہ ہو گا جسکے ذمہ دار مکمل طور پر نادرا کے فیس بڑھانے والے حکام ہونگے

یہ بھی پڑھیں  نادرا نے شناختی کارڈز کی تصدیق کیلئے ایس ایم ایس سروس متعارف کرا دی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker