تازہ ترینسائنس و آئی ٹی

انگلوٹ کاسمٹیکس کمپنی نے پانی جذب کر نے والی نیل پالش تیارکرلی

nail polish خواتین کے لئے سامان آرائش و زیبائش بنانے والی ایک کمپنی نے ایسی نیل پالش تیار کی ہے کہ جس میں پانی سرایت کر سکتا ہے۔یہ ایجاد جمالیاتی طور پر خود کو نمایاں کرنے والی ان مسلمان خواتین کے دیرینہ مطالبے کو سامنے رکھ کر تیار کی گئی ہے کہ مارکیٹ میں دستیاب نیل پالش کو انہیں وضو کرتے وقت اتارنا پڑتا تھا کیونکہ پالش کی دییز تہ کے نیچے پانی سرایت نہیں کر سکتا تھا۔بھارتی اخبار دکن کرونیکل کے مطابق یہ منفرد نیل پالش انگلوٹ کاسمٹیکس نے تیار کی ہے اور اس میں استعمال ہونے والا مواد پانی کو ناخن تک پہنچنے سے نہیں روکتا لہذا اسے استعمال کرنے والی خواتین نماز جیسے مذہبی فریضے کی ادائیگی نیل پالش اتارے بغیر کر سکیں گی۔بھارتی پروفیسر مصطفی عمر کے مطابق O2M نامی نیل پالش لگا کر وضو کیا جا سکتا ہے کیونکہ اس کی تیاری میں استعمال ہونے والا مواد سائل مادے کو آر پار سرایت ہونے سے نہیں روکتا۔ اس سے پہلے اسلام پسند ماڈرن خواتین کو یا تو نیل پالش اتار کر وضو کرنا پڑتا تھا یا پھر ‘سٹک آن’ نیل پالش کا استعمال کرتی تھیں جسے وضو کے لئے باسانی اتارا جا سکتا تھا اور بعد میں اسے دوبارہ لگا لیا جاتا۔

یہ بھی پڑھیں  سپریم کورٹ نے وزیراعظم کی نااہلی کے لئے دائر درخواست مسترد کر دی

یہ بھی پڑھیے :

One Comment

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker