پاکستانتازہ ترین

نوازشریف کوآمر سے ڈیل کرنے پرقوم سے مانگنی چاہیے ہے، رحمان ملک

حکومت اپنی مدت پوری کریگی اور آئندہ انتخابات بھی جیتے گی ،پنجاب میں امن وامان کی صورتحال مخدوش ہے ،وزیر اعلیٰ پنجاب ڈرامے بازی چھوڑ کر کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی کریں ،کراچی میں امن و امان کی خراب صورتحال کے پیچھے غیر ملکی ہاتھ ہے ،دشمن رمضان المبارک میں وار کرسکتا ہے تمام آجیز ہوشیار رہیں، صحافیوں سے بات چیت
کراچی﴿نامہ نگار﴾سینئر مشیر داخلہ رحمان ملک نے کہا ہے کہ نواز شریف کو آمر سے ڈیل کرنے پر قوم سے مانگنی چاہیے ہے ،ن لیگ کو پٹیشن اور منافقت کی سیاست ترک کرکے انتخابات کا انتظار کر نا ہو گا،حکومت اپنی مدت پوری کریگی اور آئندہ انتخابات بھی جیتے گی ،پنجاب میں امن وامان کی صورتحال مخدوش ہے ،وزیر اعلیٰ پنجاب ڈرامے بازی چھوڑ کر کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی کریں ،کراچی میں امن و امان کی خراب صورتحال کے پیچھے غیر ملکی ہاتھ ہے ،دشمن رمضان المبارک میں وار کرسکتا ہے تمام آجیز ہوشیار رہیں۔وہ اتوار کو اسٹیٹ گیسٹ ہائوس میں صحافیوں سے بات چیت کررہے تھے ۔ان کا کہنا تھا کہ شہید بے نظیر بھٹو اور آصف علی زرداری کے خلاف جھوٹے مقدمات قائم کرنے پر سیف الرحمان نے روتے ہوئے آصف زرداری سے معافی مانگی تھی اب شریف برادران کو بھی آمر سے ڈیل کرنے پر قوم سے معافی مانگنی چاہیے ہے اور سپریم کورٹ حملہ کیس میں اپنے اپنے بیانات ریکارڈ کرادینے چاہیے ہیں ۔ن لیگ کو پٹیشن اور منافقت کی سیاست ترک کرکے انتخابات کا انتظار کرنا چاہیے کیونکہ حکومت اپنی مدت پوری کریگی اور آئندہ انتخابات میں بھی جیتے گئی ۔ان کا کہنا تھا کہ ملک میں لسانیات کو فروغ نہ دیکر امن و امان قائم کیا جاسکتا ہے اس وقت پنجاب میں امن و امان کی صورتحال بہت خراب ہے اس لیے وزیر اعلی پنجاب کو ڈرامے بازی چھوڑ کر کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی کرنے ہوگئی۔سندھ نے قومی سیاست میں اہم کردار ادا کیا ہے اور کراچی میں امن و امان کی خراب صورتحال سے سندھ اور ملکی سطح پر اثرات مرتب ہوتے ہیں اس لیے غیر ملکی ہاتھ کراچی میں امن و امان کی صورتحال میں ملوث رہتے ہیں ۔ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک میں دشمن وار کرسکتا ہے اس لیے تمام آجیز ہو شیار اور محتاط رہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میں نے کبھی بھی ملکی مفاد کے خلاف کام نہیں کیا ،امریکہ نے ایک بار پاکستان سے امریکا جانے والے مسافروں کا ریکارڈ طلب کیا تھا جو میں نے دینے سے انکار کردیا تھا ،میں نے ہمیشہ ملکی مفاد اور بہتری کے لیے بات کی ہے ،ڈرون حملوں کی مخالفت بھی کرتا ہوں اس لیے امریکی سفیر مجھے نہیںبلکہ نواز شریف اور عمران خان کو اپنا سپورٹر اور حامی کہتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ مجھے کہا جاتا تھا کہ میری وجہ سے دہری شہریت کا بل لایا جارہا ہے اس لیے میں نے سینٹ سے استعفیٰ دیدیا ہے اور میں نے مشیر کے عہدے سے بھی استعفیٰ دیدیا تھا تاہم آصف زرداری کے کہنے پر میں مشیر کے عہدے سے استعفیٰ دیدیا ہے ،پارٹی مجھ سے جس حثیت میں بھی کام لے گی میں وہ کام کرونگا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button