تازہ ترینعلاقائی

ٹیکسلا:پنجاب بھر میں ڈینگی کے خلاف ایمر جنسی کاروائیاں کی جارہی ہیں،عمران مارتھ

ٹیکسلا( ڈاکٹر سید صابر علی/ نا مہ نگار)اسسٹنٹ کمشنر تحصیل ٹیکسلا شاہد عمران مارتھ نے کہا ہے کہ پنجاب بھر میں ڈینگی کے خلاف ایمر جنسی کاروائیاں کی جارہی ہی،ڈینگی کے مکمل خاتمے کے لئے منظم طریقے سے مہم چلا رہے ہیں،ڈینگی کے خاتمے کے لئے سکول کالجز بہتر کردار ادا کرے سکتے ہیں عوام میں شعور بیدار کرنے کے لئے تمام ادارے دن رات کوشاں ہیں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے،ای ڈی او ایجوکیشن ضلع راولپنڈی قاضی ظہور الحق نے کہا کہ جس نے ایک جان بچائی گویا اس نے ساری انسانیت پچائی،ڈینگی کے خاتمے کے لئے حکومت پنجاب کی ہدایت پر محکمہ تعلیم فعال کردار ادا کر رہا ہے ،ان خیالات کا اظہار انھوں نے آل پاکستان پرائیویٹ سکولز مینجمنٹ ایسوسی ایشن کی جانب سے کمیونٹی ہال ٹیکسلا میں ڈینگی مکاؤ مہم کے سلسلے میں منعقدہ تقریب سے خطاب کے دوران کیا ،تقریب سے ڈی ،ڈی ،ای او عبدالخالق،سے آل پاکستان پرائیویٹ سکولز مینجمنٹ ایسوسی ایشن کے مرکزی راہنما پروفیسر ابرار احمد خان، آل پاکستان پرائیویٹ سکول مینجمنٹ ٹیکسلا کے عہدیداران صدر شیخ قمر، چیف آرگنائزر عطاالرحمن چوہدری ،سرپرست اعلیٰ اقبال اعوان اور سفیر عالم نے بھی خطاب کیا ،جبکہ تقریب میں ڈپٹی ایجوکیشن آفیسر زنانہ روبینہ روف، آل پاکستان پرائیویٹ سکولز مینجمنٹ ایسوسی ایشن کے ،نگران اعلیٰ ملک محمد امین،سینئیر نائب صدر صفدر حسین، نائب صدر طاہر درانی، جنرل سیکر ٹری ساجد غفار،ڈپٹی سیکرٹری محمد امجد خان، ایڈیشنل سیکرٹری محمد عامر، فنانس سیکرٹری ضیاء الدین،آڈیٹر ملک محبوب، مسز آفتاب ملک،روبینہ شاہین،مختلف مدارس کے سربراہان عطاالمنعم چوہدری، عثمان گل، خالد محمود، راجہ طارق محمود، شیخ آفتاب، ملک حاجی جان،پرنسپل گورنمنٹ گرلز سکینڈری سکول ،و دیگر مدارس کے سربراہان سمیت عمائدین علاقہ کی کثیر تعداد موجود تھی،اس موقع آل پاکستان پرائیویٹ سکولز مینجمنٹ ایسوسی ایشن ٹیکسلا کے نو منتخب عہدیداران سے اے سی ٹیکسلا شاہد عمران مارتھ اور ڈی ای او ایجوکیشن ضلع راولپنڈی قاضی ظہور الحق نے حلف لیا،دریں اثناء مختلف تعلیمی اداروں کے بچوں اور بچیوں کے درمیان تقریری مقابلوں کا بھی انعقاد کیا گیا اور بہترین پرفارمنس دینے والے طلبہ و طالبات میں انعامات تقسیم کئے گئے

یہ بھی پڑھیں  جائیداد کا تنازعہ‘ ساہیوال میں 2 سگے بھائی قتل کردئیے گئے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker