تازہ ترینعلاقائی

رینالہ خورد:علی ہسپتال نان کوالیفائیڈ عملہ ان پڑھ ایل ایچ ویز سے دوران علاج بچہ سمیت تین خواتین جاں بحق

رینالہ خورد (تحصیل رپوٹر )علی ہسپتال بامہ بالا نان کوالیفائیڈ عملہ ان پڑھ ایل ایچ ویز سے دوران علاج بچہ سمیت تین خواتین جاں بحق ہوگئیں محکمہ صحت خاموش اہل علاقہ کاوزیر اعلیٰ پنجاب وزیر صحت پنجاب سیکرٹری صحت پنجاب سے کاروائی کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق تحصیل رینالہ خورد کی عوام عطائیت کے نرغے میں ہزاروں عطائی تحصیل بھر کے شہری اور دیہی علاقوں میں کلینک سجا کر عوامی جانوں اور صحت کے ساتھ کلاواڑ کرنے میں مصروف ہیں ایسا ہی ایک پرائیو یٹ علی ہسپتال بامہ بالا چوچک روڈ پر قائم ہے جہاں ڈاکٹر تو درکنار ایل ایچ وی بھی کوالیفائیڈ نہ ہے ہسپتال میں موجود جینٹس و لیڈیز تمام کے تمام ان پڑھ اور عطائیت کے پروردہ افراد ہ انسانی جانوں اور صحت سے کھیلنے میں مصروف ہیں گزشتہ تین ماہ کے دوران اپنے کمیشن ایجنٹس کے تھرو لائے گئے مریض خصوصاََ خواتین جنمیں روبینہ بی بی بھی شامل ہے جو دوران ڈلیوری /بڑے اپریشن اور ہسپتال میں موجود نان کوالیفائیڈ ایل ایچ وی و دیگر سٹاف کے ہاتھوں اپنے بچہ سمیت موت کے منہ میں چلی گئی جبکہ چند روز قبل ڈی این سی کروانے کیلئے آنیوالی مرولہ شریف کی خاتون کو ثر بی بی بھی عطائیت کے ہاتھوں اسی ہسپتال میں موت کے منہ میں چلی گئی گزشتہ آٹھ سال سے قائم اس عطائی ہسپتال میں موجود عطائیوں کے ہاتھوں درجنوں افراد علاج معالجہ سے معذور اور مختلف بیماریوں میں مبتلا ہو چکے ہیں جبکہ مبینہ طور پر متعدد خواتین مریض ملک عدم سدھار چکی ہیں اس ضمن میں انچارج اظہر وٹوسے موقف لیا گیا تو اس نے کہا کہ یہ ہمارے ہسپتال پرصرف اور صرف الزام تراشی ہے متاثرین اور معززین علاقہ نے وزیر اعلی پنجاب اور محکمہ صحت کے اعلیٰ احکام سے مذکورہ ہسپتال کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button