تازہ ترینعلاقائی

سبی:کوئٹہ سے راولپنڈی جانے والی جعفر آیکسپریس کی بریکیں فیل ہوجانے سے آب گم کے علاقہ میں الٹ گئی

سبی ( محمد طاہر عباس) حادثہ یا تخریب کاری کوئٹہ سے راولپنڈی جانے والی جعفر آیکسپریس کی بریکیں فیل ہوجانے سے آب گم کے علاقہ میں الٹ گئی ڈرائیور ،اسسٹنٹ ڈرائیور دوپولیس اہلکاروں سمیت دس12 افراد جان بحق سے200 زائد مسافر زخمی متعدد مسافروں کی حالت نازک مچ سبی ڈھاڈر کوئٹہ کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافد وفاقی وزیر ریلوے نے تحقیقات کا حکم دیدیا پاک افواج ایف سی امدادی ٹیموں کی کاروائیاں رات گئے تک جاری مسافر ٹرین ڈرائیور کی لاش رات گئے بھی نہ نکل سکی کوئٹہ ریلوے سیکشن کئی گھنٹے بند حادثہ کی تحقیقات کا حکم وفاقی وزیر ریلوے وزیر اعلیٰ بلوچستان ، سردار یار محمد رند، پیر الحاج صاحبزادہ محمد خالد سلطان القادری کی جانب سے اظہار افسوس تفصیلات کے مطابق کوئٹہ سے وارلپنڈی جانے والے جعفر ایکسپریس ضلع بولان کے علاقہ آب گم کے مقام پر انجن نمبر 5116کی بریکیں فیل ہوجانے کے باعث الٹ گئی جس کے باعث انجن سمیت تمام بوگیاں تباہ ہوگئی حادثہ کے باعث مسافر ٹرین کے ڈرائیور محمد ایوب ،اسسٹنٹ ڈرائیورمحمد اقبال وسیم،ڈیوٹی ڈرائیور قمر عباس ، چارج مین رضوان احمد، فیض اللہ ولد عبدالستار،ٹرین فیٹر محمد امین رخشانی، محمد یونس ولد عبدالطیف ، محمد اسماعیل ثاقب ولد اللہ واسیہ ، بی بی سفییہ دختر امین قیصر، بی بی آمھہ زوجہ محمد امین ، بی بی سیکنہ زوجہ افضل ، محمد امین ولد قاسم ، شکیل احمد سمیت 12مسافر موقع پر جان بحق ہوگئے جن میں ریلوے ایف سی اور پولیس اہلکاروں سمیت مسافر شامل ہے جبکہ مشتاق مسعود ، وسیم ، محمد رحیم سمیت 200سے زائد مسافر ذخمی ہوئے جن میں سے متعدد مسافروں کی حالت نازک تبائی جاتی ہے جعفر ایکسپریس کو حادثہ پیش آنے کی اطلاع ملتے ہی سبی کوئٹہ سے امداد ی ریلوے ریلیف ٹرین پاک افواج ایف سی کی امدادی ٹیمیں روانہ کی گئی تاہم حادثہ کے موقع پر مقامی لوگوں اور مسافروں نے اپنی مدد آپ کے تحت ذخمیوں کو ٹرین سے نکالااور طبی امداد کیلئے قریبی ہسپتالوں میں لے جایا گیا مذکورہ مسافرٹرین حادثہ کی اطلاع ملنے پر پاک افواج کے آفیسران ڈی ایس کوئٹہ فیض محمد بگٹی، ڈپٹی کمشنر بولان محمد اسلم سومرو ، سبی اسکاوٹس 68ونگ کرنل کاشاں ، ڈی پی او بولان پولیس لیویز ایف سی کی بھاری نفری کے ہمراہ پہنچے اور امدادی کاموں میں حصہ لیا ذخمیوں کو پاک افواج کے ہیلی کاپٹرز ایمبونسز اور گاڑیوں کے زریعے ہسپتالو میں لے جایا گیا جبکہ مچ ڈھاڈرسبی کوئٹہ کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی عینی شاہدین کے مطابق حادثہ کے بعد ہر جانب چیچ وپکار تھی لوگ اپنی مدد آپ کے تحت امدادی سرگرمیوں میں حصہ لے رہے تھے حادثہ کا شکار ہونے والی مسافر ٹرین کا درائیور محمد ایوب دوماہ بعد ریٹائرڈ ہونے والا تھا، وفاقی وزیر ریلوے سعد رفیق نے جعفر ایکسپریس کے حادثہ کی تحقیقات کا حکم دیدیا جبکہ وزیر اعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالماک بلوچ، صوبائی وزیر صحت بلوچستان رحمت صالح بلوچ، پاکستان تحریک انصاف صوبائی کے چیف آرگنائزر سردار یار محمد رند، جماعت الصالحین پاکستان انٹرنیشنل کے بانی و قائد الحاج صاحبزادہ پیر خالد سلطان القادری سروری نے آب گم میں ہونے والے ترین حادثہ میں جان بحق ہونے والے کے لواحقین اور ذخمیو ں ہونے والوں دلی ہمدردی کا اظہار کیا واضح رہے کہ بولان کی قدیم ترین دشوارگزر ریلوے ٹریکس تاج برطانیہ نے روس کے خلاف اپنی طاقت مستحکم کرنے کیلئے دفاعی نقطہ نظر کے تحت میں 1880مکمل کی تھی کولپور سے آب گم کی طرف ڈھلوان ہونے کی وجہ سے گاڑیوں کے بے قابو ہوکر اسٹیشن میں گھس جانے کے خطر ے کے پیش نظر کولپور سے آب گم تک چار کیچ سائنڈنگ بنائی گئیں ہیں گزشتہ135 سالوں میں ہونے والے بے شمار حادثات نے یہ بات ثابت کردی ہے کہ کیچ سائنڈنگ اور سلپ سائنڈنگ کی تعمیر قریبی اسٹیشنوں کیلئے ضروری تھی گزشتہ35 سال کے دوران صرف مچ آب گم اسٹیشن پر مال گاڑیوں کے اوورشوٹ ہوکر کیچ سائنڈنگ پر چڑھنے کے متعدد واقعات بھی ہوچکے ہیں جن میں کم وبیش12 افراد جان بحق ہوئے ہیں

یہ بھی پڑھیں  گوادر کو خلیجی ممالک کی طرح ڈیوٹی فری زون بنانا چاہتے ہیں، وزیراعظم نواز شریف

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker