تازہ ترینعلاقائی

موجودہ حکومت اپنی آئینی مدت پوری کرے گی،سردارمحمد یوسف

ٹیکسلا(ڈاکٹر سید صابر علی/نا مہ نگار)وفاقی وزیر مذہبی امور سردار محمد یوسف نے کہا ہے کہ حکومت ختم ہونے کی افواہیں جلد دم توڑ دیں گیں ، موجودہ حکومت اپنی آئینی مدت پوری کرے گی،موجودہ حکومت نے عوام کو ڈیلیور کیا، دہشتگردی کے واقعات میں خاطر خواہ کمی ہوئی ،آپریشن کے بعد کراچی کے حالات میں بہتری آئی کل کے اور آج کے کراچی میں زمین آصمان کا فرق ہے،کراچی کے لوگ مطمعن ہیں،جب تک امن قائم نہیں ہوتا ملک ترقی کی راہ پر گامزن نہیں ہوسکتا نہ ملکی معیشت کی حالت اسی وقت سنور سکتی ہے جب ملک میں امن و امان کی صورتحال بہتر ہوگی،چائنہ کے ساتھ کاروباری معاہدات حکومت پر اعتماد کا مظہر ہے،بیرونی سرمایہ کار وں کو ملک میں بہتر ماحول فراہم کیا جارہا ہے جس کی وجہ سے بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا ہے ، ان خیالات کا اظہار انھوں نے واہ کینٹ ماڈل ٹاون جامع مسجد اصحاب صفہ کے دورہ کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا قبل ازیں انھیں ا دارہ یلدرم ٹرسٹ کے ذمہ داران نے قرانی آیات جو جا بجا زمین پر پڑی نظر آتی ہیں انکو محفوظ کرنے کے حوالے سے اپنے پروجیکٹس بتائے اور حکومت سے اس ضمن میں معاونت کی اپیل کی ،پاک فوج کے ضرب عضب آپریشن سے بھی امن کی فضا بہتر ہوئی ہے،پشاور آرمی پبلک سکول میں انسانیت سو زواقعہ کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے،پاک فوج اور حکومت دہشتگردوں کے قلع قمع پر ایک پیج پر ہے،سندھ حکومت رینجرز کو توسیع دینے کے حوالے سے کا شکار ہے تاہم وہ آپریشن کے خلاف بھی نہیں ہے،اس بات کا سندھ حکومت اعتراف کرچکی ہے کہ آپریشن سے کراچی میں امن ہوا ہے بہتر نتائج ملے،تاہم لااینڈ آرڈر کی صورتحال کو بہتر بنانا صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے وفاقی حکومت انھیں ہر طرح سے سپورٹ کر رہی ہے،ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ محض بیان بازی سے کچھ نہیں ہوتا حالات بہتر ہونگے،وفاقی وزیر داخلہ اپنی ذمہ داریوں کے مطابق بیان دے رہے ہیں،انکا کہنا تھا کہ مارشل لا کی باتیں کرنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں ، موجودہ حکومت جو عوام کی منتخب حکومت ہے اپنی آئینی مدت پوری کرے گی ،نظام صلوۃ کے نفاز کے حوالے سے انکا کہنا تھا کہ اس ضمن میں چاروں صوبوں کے وزیر اعلیٰ سے ملاقات کی جائے گی ، جبکہ بعد ازاں وزارت اوقاف کے وزیر اور سیکرٹریوں کو اسلام آباد میں دعوت دی جائے گی ،جس میں مشترکہ طریقہ کار وضع کیا جائے گا، مدارس کی رجسٹریشن کے حوالے سے وفاق مدارس یا تنظیم مدارس کے ذمہ دار لوگوں متعدد بار میٹنگز ہوئیں ،رجسٹریشن اور آڈٹ پر کسی کو کوئی اعتراض نہیں،تاہم رجسٹریشن فارم کے طویل ہونے پر اعتراض کیا گیا کہ اسے مختصر بنایا جائے ،انکا کہنا تھا کہ مدرسہ کے نصاب کی نہیں بلکہ ہم تو تعلیمی نصاب میں ریفارمز کی بات کرتے ہیں۔ سکولز ، کالجز ، بشمول مدارس میں تعلیمی نصاب میں ریفارمزکی بات ہونی چاہئے،اور ا س پر تعلیم کی وفاقی وزرات کام کر رہی ہے جس کی ذمہ داری بھی ہے،انکا کہنا تھا کہ ایک ایسا نصاب تعلیم مرتب کیا جائے جو پوری قوم کے لئے قابل قبول ہو،انکا کہنا تھا کہ وزارت مذہبی امور حجاج کرام کو سہولیات مہیا کرنے کے لئے انقلابی اقدمات کر رہی ہے،نئی حج پالیسی میں حجاج کرام کو مزید بہتر سہولیات دینے کے حوالے سے پیش رفت جاری ہے،انکا کہنا تھا کہ جو بیس فیصد کمی ہوئی ہے امید ہے وہ جلد بحال ہوجائے،انھوں نے بتایا کہ حج کے دوران کرین حادثہ میں شہید ہونے والے حجاج کرام کے لواحقین کو تاحال سعودی حکومت کی جانب سے مالی مدد نہیں کی گئی، اور نہ منیٰ میں شہید ہونے والے حجاج کرام کو سعودی حکومت کی جانب سے امدادی پیکج کا اعلان کیا گیا ،تاہم موجودہ حکومت نے تمام حجاج کرام جو حج کے دوران شہید ہوئے کے لواحقین کو پانچ پانچ لاکھ روپے کی امداد کی

یہ بھی پڑھیں  مصطفی آباد:تین نامعلوم موٹرسائیکل سوار دن دہاڑے تھائی لینڈ کے نمائندے کو لوٹ کر فرار

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker