تازہ ترینعلاقائی

واہ برٹش انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی ٹیکسلا کی انتظامیہ کی غفلت اور اپرواہی نےطالب علم کا قیمتی تعلیمی سال ضائع کردیا

ٹیکسلا(نا مہ نگار)واہ برٹش انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی ٹیکسلا کی انتظامیہ کی مبینہ غفلت اور لاپرواہی نے ایک طالب علم کا قیمتی تعلیمی سال ضائع کر دیا۔ وزیر اعلیٰ پنجاب ، وزیر داخلہ اور چیرمین پنجاب بورڈ آف ٹیکنیکل ایجوکیشن سے انصاف کی اپیل۔ نااہلی اور غفلت کے مرتکب ادارے کے ذمہ داران کے خلاف سخت تادیبی کاروائی کی جائے ۔ متاثرہ طالب علم کی اپیل۔ تفصیلات کے مطابق بلال کالونی ٹیکسلا کے رہائشی طالب علم عباس مزمل نے بتایا کہ وہ واہ برٹش انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی ، جی ٹی روڈ ٹیکسلا کا ڈپلومہ آف سول ٹیکنالوجی سیکنڈ شفٹ کا طالب علم ہے۔ اکتوبر کے مہینے میں مبلغ تین ہزار روپے اور داخلہ فارم برائے سالانہ امتحان کالج ہذا میں جمع کروایا۔ دسمبر میں رول نمبر سلپ آنے پر جب اس نے کالج سے رجوع کیا تو کالج انتظامیہ نے بتایا کہ اس کا تو رول نمبر سلپ ہی نہیں جاری ہوئی۔ اس پر جب ریکارڈ چیک کیا گیا تو معلوم ہوا کہ اس کا داخلہ فارم ہی بورڈ نہیں بھیجا گیا او ر اُسے کالج انتظامیہ نے مبینہ غفلت اور لاپرواہی کے باعث کہیں گم کر دیا۔ اس کے احتجاج کے باوجود کالج انتظامیہ نے اسے فیس واپس کرنے سے نہ صرف انکار کر دیا بلکہ اُلٹا چور کوتوال کو ڈانٹے کے مترادف اُس پر الزام لگا دیا کہ اس نے تو فارم ہی نہیں جمع کروایا۔ تاہم اس کے پاس اصل رسید اس بات کی گواہی دیتی ہے کہ اس نے نہ صرف فیس جمع کروائی بلکہ فارم بھی جمع کروایا۔ تاہم کالج انتظامیہ کی غفلت اور لاپرواہی کے باعث اس کا فارم گم کر دیا گیا۔ متاثرہ طالب علم نے متعلقہ اداروں سے اصلاح احوال کی اپیل کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  بنگلہ دیش ٹیم کادورہ رکوانے میں 2 مقامی اخباروں،سینئرکھلاڑیوں کاہاتھ ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker