تازہ ترینعلاقائی

اتحاد پریس کلب دیپالپورکے عہدیداران کی پروقار تقریب حلف برداری

دیپالپور(قاسم علی سے)اتحاد پریس کلب دیپالپورکے عہدیداران کی پروقار تقریب حلف برداری ،اتحاد پریس کلب نے دیپالپور میں مثبت صحافت کو فروغ دیا ہے ،راو محمد اجمل خاں و دیگر کا خطاب تفصیلات کے مطابق اتحاد پریس کلب دیپالپور کے عہدیداران کی تقریب حلف برداری النور میرج ہال دیپالپور میں منعقد ہوئی جس میں چوہدری رمضان اشرف سرپرستِ اعلیٰ ،ملک قمر شاہد آہیر چیئرمین، محمد ایوب خاورسینئر وائس چیئرمین،جاوید جسکانی وائس چیئرمین،محمد اقبال فاروق صدر مظہر علی بھٹی سینئر نائب صدر،میاں محمد یٰسین سعیدی نائب صدر اول،مہر محمد یوسف نائب صدر دوئم،ملک عبداللہ نوناری نائب صدر سوئم،حافظ جمشید اشرف جنرل سیکرٹری،محمد ریاض پرنس جوائنٹ سیکرٹری،حافظ عابد الٰہی فنانس سیکرٹری،طاہر مٹھوپراچہ سیکرٹری نشرواشاعت ، محمد سلیم چیئرمین مجلس عاملہ اور قاسم علی نے چیف کوآرڈینیٹرپرنٹ و الیکٹرانک میڈیا کے طور پر حلف اٹھایا جبکہ الیکٹرانک میڈیا باڈی کیلئے مختار احمد چوہدری نے بطور چیئرمین،وائس چیئرمین عبدالروؤف طاہر،صدر نوید احمد چوہدری،نائب صدر حاجی خالد نواز اور ملک فیاض حسن اعوان نے جنرل سیکرٹری کا حلف اٹھایا حلف پارلیمانی سیکرٹری برائے صنعت و پیداوار راو محمد اجمل خان نے لیا ہے اتحاد پریس کلب کی پروقار تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنرامتیاز احمد خاں کھچی،صدر بار ماجد حسین وٹو،میاں بلال عمر بودلہ،بابائے صحافت منیر احمد چوہدری نے اتحاد پریس کلب دیپالپور کو بھرپور خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ اتحاد پریس کلب دیپالپور نے اپنے قیام کے دوسال کے عرصہ کے دوران ہی جو مقام اپنی ولولہ انگیز اور پرعزم ٹیم کیساتھ حاصل کیا ہے وہ انتہائی لائق تحسین ہے اور ہمیں کامل یقین ہے کہ اتحاد پریس کلب قلم کی حرمت کا ہمیشہ کی طرح خیال رکھے گا اور زرد صحافت کی حوصلہ شکنی کرتا رہے گاجبکہ صدر اتحاد پریس کلب محمد اقبال فاروق اور چیئرمین الیکٹرونک میڈیا مختار احمد چوہدری نے کہا کہ اس کا کریڈٹ ہماری پوری ٹیم کو جاتا ہے ۔تقریب سمیں علاقہ بھر سے وکلاء ،سیاسی،سماجی وادبی شخصیات کے علاوہ سینکڑوں معززین علاقہ نے شرکت کی اور اس پروگرام کو دیپالپور کی صحافتی تاریخ کا ایک یادگار ترین اور خوبصورت پروگرام قراردیا تقریب کے آخر میں پرتکلف کھانے کا اہتما م بھی کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں  بھارت کے جھوٹ اور بَدحواسیاں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker