تازہ ترینعلاقائی

بدین کے نوائی شھرون ملکانی اورخیرپورگھنبوہ کے سینکڑوں کاشتکارون کا احتجاج

badinبدین(نامہ نگار)بدین کے نوائی شھرون ملکانی اور خیرپور گھنبوہ کے سینکڑون کاشتکارون کا علاقے مین گذشتہ چھہ ماہ سے نہری پانی کی قلت کے خلاف ڈسٹرکٹ جیل بدین کے آگے احتجاجی دھرنا گذشتہ دو دنون سے جاری ، دھرنے کے باعث جیل انتظامیہ جیل مین محصور ، مرکزی گیٹ پر دھرنے کے نتیجے مین سینکڑون قیدی عدالت مین پیشی پر نہ پہنچ سکے، جبکے دھرنے کے باعث گذشتہ دو دنون سے مٹھی، عمر کوٹ ،سلام کوٹ نگر ودیگر شھرون کی جانب جانے والی پبلک ٹرانسپورٹ معطل گاڑیون کی لمبی قطارین لگ گئین، کاشتکارون نے جیل بھریو تحریک کا اعلان کردیا ، کاشتکاررات کو بستر سڑک پر بچھا کر سو گئے،تفصیلات کے مطابق بدین کے نوائی شھرون ملکانی شریف اور خیرپور گھنبوہ مین گذشتہ چھہ ماہ سے جاری نہری پانی کی قلت کے خلاف سینکڑون کاشتکار سراپاء احتجاج ہوگئے ہین، سینکڑون کاشتکارون نے ملکانی اور خیرپور گھنبوہ سے ستر کلومیٹر لبما لانگ مارچ کر کے ڈسٹرکٹ جیل بدین مرکزی گیٹ کے آگے پیر فیاض شاھ راشدی، سید عطا اللہ شاھ، قاضی کرم اللہ و دیگر کی قیادت مین گذشتہ دو روز سے احتاجی دھرنا دیا ہوا ہے، جس کے باعث بدین سے دیگر شھرون کی جانب پبک ٹرانسپورٹ دو روز سے معطل ہے جبکے جیل انتظامیہ جیل کے اندر محصور بنی ہوئی ہے اور سینکڑون قیدی عدالت مین پیشی پر نہین پہنچ سکے ہین، کاشتکارون نے رات دھرنے کی جگہ سڑک پر بستر ڈال کر گزاری ہے ، کاشتکارون کا کہنا ہے کے انہین پانی فراہم کیا جائے بصورت دیگر دھرنا ختم نہین کیا جائے گا، کاشتکارون کا مزید کہنا ہے کے جیل بھریو تحریک کے تحت وہ گرفتاریان پیش کرنے کو تیار ہین ، انہون نے کہا کے نہری پانی کی قلت کے باعث ملکانی اور خیرپور گھنبوہ کی پانچ لاکھ سے زائد زرعی ایراضی بنجر بن گئی ہے ان کے بچے فاقہ کشی پر مجبور ہین ، ان سے تو جیل کے قیدی بہتر زندگی گزار رہے ہین جنہین جیل مین دال روٹی اور پانی تو ملتا ہے ، انہون نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا ہے کے پانی کی فراہمی کو ممکن بنایا جائے بصورت دیگر حالات کی سنگینی کی زمدرا حکومت سندھ اور ضلعی انتظامیہ ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں  اگرچاند اچانک دھماکے سے پھٹ جائے توکیا ہوگا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker