تازہ ترینعلاقائی

ٹی ایم اے رینالہ خورد کی خورد برد عروج پر جاری

رینالہ خورد (تحصیل رپوٹر)ٹی ایم اے رینالہ خورد ماہانہ دس سے پندرہ لاکھ روپے پٹرول اور ڈیزل کی مد میں چیف آفیسر سمیت مختلف ذمہ داروں کی جیبوں میں جانے لگے چار سال سے تعینات عامر تنویر نے جعلی بلوں کی ذریعے لاکھوں روپے کی خرد برد کی دو ماہ سے ٹی او پی اینڈ سی کی سیٹ خالی تنخواہ ٹی ایم اے کے پٹرول اور ڈیزل کے بلوں میں ایڈجسٹ ہو رہی ہے شہریوں کی جانب سے چیرمین نیب سے انکوائری کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق تحصیل میونسپل ایڈمنسٹریشن رینالہ خورد کرپشن لوٹ مار بدعنوانیوں کا گڑھ بن گیا گزشتہ چند سالوں سے شہر میں کروڑوں روپے کی خرد برد کی گئی اور یہ کروڑوں روپیہ خرد برد ہونیوالا مختلف عہدوں پر تعینات ہونے والے ٹی اوزاور دیگر نیچلے عملے نے اپنی جیبوں میں ڈال لیا ایک اندازے کے مطابق گزشتہ ڈیڑھ سال میں شہر بھر میں صفائی ستھرائی کے نام پر ہی دو کروڑروپے جعلی بلوں کے ذریعے ٹی ایم اے کے خزانہ سے نکلوایا گیا حالانکہ شہر میں صفائی کیلئے استعمال ہونے والی مشنیری جسمیں ٹریکٹر وغیرہ شامل ہیں ان کو روزانہ تین لٹر سے زیادہ پٹرول یا ڈیزل نہ دیا جاتا ہے لیکن ریکارڈ میں روزانہ سینکڑوں لٹر ڈیزل اور پٹرول ڈالویا جارہا ہے بعض مشینری ایسی بھی ہے جو اپنے اسٹینڈ پر کھڑی کھڑی ڈیزل پی رہی ہے کرپشن کا یہ عالم ہے کہ دو ماہ سے تحصیل آفیسر پلاننگ کی سیٹ خالی ہے رولز کے مطابق ٹی او پی اینڈ سی کی تنخواہ خزانہ میں جمع رہتی ہے لیکن اس کو بھی ڈیزل اور پٹرول کے بلوں میں ایڈجسٹ کر کے نکلوایا جا رہا ہے صفائی ستھرائی کیلئے استعمال ہونے والی تمام مشینری میں ڈیزل ڈالونے کے اختیارات چیف آفیسر عامر تنویر کے پاس ہیں جو 2011-12سے ٹی ایم اے رینالہ خورد میں تعینات ہے عوامی سماجی حلقوں سمیت سینکڑوں شہریوں جنمیں محمد خالد مہر اللہ یار محمد صدیق اویس علی چوہدری حمید تنویر احمد شامل ہیں نے چیرمین نیب سے ٹی ایم اے رینالہ خورد کا ریکارڈ قبضے میں لیکر انکوائری کا مطالبہ کیا ہے

یہ بھی پڑھیں  لاہور : مون سون بارشیں، درجنوں فیڈرز ٹرپ کر گئے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker