تازہ ترینعلاقائی

ڈسکہ:رشوت نہ دینے کی پاداش میں 38ایجوکیٹروں کی2ماہ کی تنخواہیں روک دی گئیں

daskaڈسکہ(نامہ نگار)رشوت نہ دینے کی پاداش میں 38ایجوکیٹروں کی2ماہ کی تنخواہیں روک دی گئیں،محکمہ تعلیم کے کلرک بادشاہ اور اکاؤنٹس آفس والے کئی ماہ سے ٹرخارہے ہیں وزیر اعلی پنجاب نوٹس لیں درجنوں ایجوکیٹروں کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق رواں سال اپریل میں 75کے قریب تعینات ہو نے والے ایس ای ایس ای اور ای ایس ای ایجوکیٹروں میں سے 21ایس ای ایس ای اور17ای ایس ای ایجوکیٹرز رشوت نہ دینے کی وجہ سے ماہ ستمبر اور اکتوبر کی تنخواہوں اور دیگر واجبات سے ابھی تک محروم ہیں جبکہ نذرانہ دینے والے ایجوکیٹروں کو واجبات سمیت تنخواہوں کی ادائیگی کر دی گئی محکمہ تعلیم میں براجمان کلرک بادشاہ اور اکاؤنٹس آفس والے بغیر رشوت کے کام کرنا گناہ کبیرہ سمجھتے ہیں جس کی وجہ سے ملازمین کے دفتری کاموں کو اعتراضات کی دلدل میں دھکیل دیا جاتا ہے جس سے تھک ہار کر ٹیچرز رشوت دینے پر مجبور ہو جاتے ہیں 2ماہ کی تنخواہوں کی ادائیگی نہ ہو نے پر درجنوں ایجوکیٹروں نے خادم اعلی پنجاب میاں شہباز شریف سے نوٹس لینے کی اپیل کی ہے ڈپٹی ایجوکیشن آفس کے عملہ کے مطابق ایجوکیٹروں کی ستمبر اور اکتوبر کی تنخواہوں کا بل یکم دسمبر کو اکاؤنٹس آفس بھیج دیا گیا ہے ان کی ڈیمانڈ کے مطابق اپنی جیب سے پوری نہیں کر سکتے جب اس ضمن میں اکاؤنٹس آفس کے ذمہ داران آفسران سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ ابھی ہمارے پاس بجٹ نہیں ہے اس لیئے تنخواہیں ادا نہیں کر سکتے ۔

یہ بھی پڑھیں  راہزنی کے مقدمہ میں مطلوب دومجرمان اشتہاری گرفتار

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker