تازہ ترینعلاقائی

ٹیکسلا:صحافت کی آڑ میں شہریوں کو بلیک میل کر کے لوٹنے والے گروہ کے تین افراد گرفتار

ٹیکسلا(ڈاکٹر سید صابر علی / نا مہ نگار)مقدس پیشے کو بدنام کرنے اورصحافت کی آڑ میں شہریوں کو بلیک میل کر کے لوٹنے والے گروہ کے تین افراد گرفتار ، پولیس نے متاثرہ شخص کی درخواست پر مقدمہ درج کر لیا، مذکورہ گروہ کے پکڑے جانے کی خبر پر گروہ کے ہاتھوں لٹنے والے متعدد افراد ڈی ایس پی آفس پہنچ گئے،مذکورہ گروہ کافی عرصہ سے واہ، ٹیکسلا ، حسن ابدال اور مضافاتی علاقوں میں ہوٹلوں ، پٹرول پمپوں، میڈیکل سٹوروں ، سمیت متعدد افراد کو اپنے آپ کو حساس ادارے کے ملازم ظاہر کر کے لوٹ مار میں مصروف تھے،اطلاع پر واہ کینٹ ٹیکسلا کے صحافی بھی موقع پر پہنچ گئے صحافیوں نے واقعہ کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے اسے انتہائی گھناونا فعل اور صحافت کو بدنام کرنے کاوطیرہ قرار دیا،صحافیوں کی مذکورہ گروہ کی پشت پناہی کرنے والے در پردہ نجی ٹی وی کے ذمہ داران کے خلاف بھی کاروائی کا مطالبہ،اور پمراسے فوری نوٹس لینے کی اپیل،مذکورہ گروہ کی مشکوک کاروائیوں پر صحافتی حلقوں میں تشویش کی لہر دور گئی ،گروہ کے افراد اپنے آپ کو کبھی پرائس کنٹرول مجسٹریٹ ، کبھی فوڈ انسپکٹر اور کبھی حساس ادارے کے ملازم ظاہر کر کے شہریوں کو لوٹتے رہے،واہ کینٹ کے حساس ترین علاقہ میں اس طرح کی سر عام کاروائیاں انتظامیہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہیں،تفصیلات کے مطابق ایک نجی ٹوی وی سے تعلق رکھنے والے افراد جو کہ کافی عرصہ سے واہ کینٹ ٹیکسلا ، حسن ابدال اور گردونواح میں متعدد جگہوں پر چھاپے مار کے شہریوں کو لوٹ رہے تھے ، جن کا تعلق راولپنڈی سے بتایا جاتا ہے،گرو ہ میں سرغنہ زاہد عارف ولدمحمد عارف،محسن علی ولد رحیم بخش،اور واجد خان ولد نزیر خان شامل تھے جبکہ گروہ کے دیگر افراد بھی ہیں جو انکے ساتھ ملکر کاروائیاں ڈالتے تھے، میاں فلنگ اسٹیشن جی ٹی روڈ بالمقابل واہ ماڈل ٹاون محمد خالد ولد حسن دین ساکن لوسر شرفو نے تھانہ صدر میں درخواست دی کہ دن دو بجے کے قریب تین افراد مٹسو بشی گاڑی نمبری EC-233میں اسکے پٹرول پمپ پر آئیاور آتے ہی افرا تفری مچا دی کہنے لگے کہ ہمارا تعلق حساس ادارے سے ہے اپنا تمام ریکارڈ چیک کراو اور تما م کیش ہمارے پاس جمع کراو،متاثرہ شخص کا کہنا تھا کہ اسے شک گزراکیونکہ چند روز قبل بھی عزیز الرحمان کے پٹرول پمپ سے پر موجود افراد کو ڈرا دھمکا کربھاری رقم وصول کی گئی ، جبکہ گاڑی مذکورہ میں پٹرول فل کرایا گیا اور یہ لوگ موقع سے غائب ہوگئے ، لہذا میں نے مقامی پولیس کو واقعہ کی فوری اطلاع دی، پولیس نے موقع پر پہنچ کر گروہ میں شامل تین افراد کو گاڑی سمیت گرفتار کر لیا، اس گروہ کو چھڑانے کے لئے کئی اہم شخصیات میدان میں کود پڑیں جبکہ مذکورہ نجی ٹی کا ببوروچیف بھی بزریعہ فون مقامی صحافیوں کو ڈراتا رہا اور پولیس پر دباو ڈالتا رہا ، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ مذکورہ شخص انکی پشت پناہی کرتا ہے،ڈی ایس پی ساجد گوندل نے تمام افراد کو ڈی ایس پی آفس طلب کر لیا اور معاملہ کی مکمل چھان بین کی اس موقع پر واہ کینٹ ٹیکسلا کی صحاتی تنظیموں کے نمائندے بھی موقع پر پہنچ گئے ، ڈی ایس پی ساجد گوندل نے انکوائری کے بعد مقدمہ اندارج کا حکم دیا جس پر مذگورہ گروہ کے تین افراد پر زیر دفعہ420/170 کے تحت تھانہ صدر واہ کینٹ میں مقدمہ درج کر لیا گیا ، ادہر یہ امر قابل زکر ہے کہ مذگورہ بلیک میلر گروہ کی گرفتاری کی اطلاع پر متعدد افراد جو اس گروہ کے عتاب کا نشانہ بننے ڈی ایس پی آفس پہنچ گئے اور اپنے لٹنے کی روداد سنائی ، مکہ ہوٹل جی ٹی روڈ نواب آباد واہ کینٹ ملک خصر کا کہنا تھا کہ یہ لوگ میرے ہوٹل یں آئے ان میں سے ایک نے اپنے آپ کو پرائس کنٹرول مجسٹریٹ ، دوسرے نے فوڈ انسپکٹر جبکہ تیسرے نے میڈیا کا نمائندہ ظاہر کیا اور مجھ سے سات ہزار روپے لے گئے ،جبکہ ایک سادہ چٹ پر میرے دستخط کرائے کہ تمھیں ایک سال اب کوئی نہیں پوچھے گا،ٹیکسلا کے ڈاکٹر رمضان عبداللہ نے بھی میڈیا کو بتایا کہ ان لوگوں نے میرے میڈیکل سٹور پر دورہ کے دوران مجھے ہراساں کیا اور بھاری رقم کا تقاضہ کیاتھا،یاد رہے کہ قبل ازیں بھی اس قسم کے واقعات واہ کینٹ ٹیکسلا میں رونما ہوتے رہیں ہیں جو اپنے آپ کو نجی ٹی وی کے نمائندے اور حساس ادارے لے ملازم ظاہر کر کے لوگوں کو لوٹتے رہے،واہ کینٹ ٹیکسلا کے صحافیوں نے یکجہتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس فعل کی بھرپور مذمت کی ہے اور ذمہ دران سے اپیل کی ہے کہ اس کے سدباب کے لئے مربوط میکا نیزم اختیار کیا جائے تاکہ بلیک میلنگ میں ملوث عناصر کی حوصلہ شکنی ممکن ہو

یہ بھی پڑھیں  نشان حیدرپانیوالے راشدمنہاس شہید کی آج برسی منائی جارہی ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker