پاکستانتازہ ترین

ڈرون حملے ملکی خودمختاری کی سنگین خلاف ورزی ہیں، صدر کا پارلیمنٹ سے خطاب

zardariاسلام آباد(بیوروچیف) صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ ڈرون حملے ملکی خودمختاری کی سنگین خلاف ورزی ہیں، تمام ممالک کے ساتھ برابری اور احترام کی بنیاد پر تعلقات چاہتے ہیں۔ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے چھٹی بار تاریخی خطاب کرتے ہوئے انہوں نے میاں نوازشریف کو وزیراعظم کا منصب سنبھالنے اور نو منتخب اراکین کو مبارکباد پیش کی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ نوازشریف عوام کی توقعات پر پورا اترینگے۔ صدرزرداری نے کہا کہ الیکشن میں حصہ لیکر عوام نے جمہوریت کو مضبوط کیا، آج پاکستان میں آمروں کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ نے آئین سے غیرجمہوری شقوں کو نکال دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سابقہ دورمیں آئین کی پامالی کی گئی اور بدقسمتی سے ریاست کے ستونوں نے اسکی توثیق کی۔ صدر نے کہا کہ جمہوری قوتوں کو آگے بڑھنے کیلئے ایک دوسرے کیساتھ محاذآرائی سے گریز کرناچائیے۔ پاکستان کو درپیش چیلنجز کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ توانائی ، انتہا پسندی اور دہشت گردی بڑے چیلنجز ہیں تاہم امید ہے کہ حکومت ان پر قابو پا لے گی۔ صدر نے توہین رسالت کے قانون کے غلط استعمال کو روکنا ہوگا اور ملک میں بین المذاہب ہم آہنگی کو فروغ دینا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی رٹ کو چیلنج کرنیوالوں کیخلاف طاقت کے استعمال کیلئے تیار رہنا چاہئے۔

یہ بھی پڑھیں  وزیر اعظم پاکستان آج رات قوم سے الوداعی خطاب کریں گے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker