پاکستانتازہ ترین

آج معرکےکاآخری دن،مذاکرات کیلئےنہ آئےتوموقع گنوادینگے،طاہرالقادری

imagesاسلام آباد (بیوروچیف)  تحریک منہاج القران کے سربراہ ڈاکٹر علامہ طاہر القادری نے جلسے کے چوتھے دن شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکمران نہ عدل و انصاف کو مانتے ہیں نہ انسانی حقوق کو، نہ آئین کو مانتے ہیں نہ قانون کو، حکمرانوں کو 3 بجے تک کی ڈیڈ لائن دیتا ہوں، اس کے بعد اپنے اگلے اقدام کا اعلان کریں گے، آج دھرنے کا آخری دن ہے، کل دھرنا نہیں ہوگا، آج شام سے پہلے معرکے کو ختم کرنا ہے، حکمران مذاکرات پر یقین رکھتے ہیں نہ ہی جمہوری مزاج رکھتے ہیں، اگرصدر مذاکرات کےلیے نہیں آتے توامن کا موقع گنوا دیں گے۔ حکمرانوں کے رویئے نے ثابت کردیا کہ ملک میں امن اور حقیقی جمہوریت کیلئے کوئی گنجائش نہیں۔
انہوں نے کہا کہ حکمران پرامن افراد سے مذاکرات نہیں چاہتے۔ تمہیں بجلی کیسے ملے؟ توانائی کے پیسے وزیراعظم کھا گئے۔ حکمران سپریم کورٹ کو قانون سکھاتے ہیں۔ روٹی، کپڑا،مکان، گیس، بجلی سب غائب کردیاگیا۔ کرپشن ملک کو دیمک کی طرح کھا رہی ہے۔ پوری قوم خوف و ہراس میں زندگی گزارنے مجبور ہے۔ ہم  ایسی جمہوریت چاہتے ہیں جسے پیسوں سے خریدا نہ جاسکے۔ پاکستان کے آزاد میڈیا کو سیلوٹ کرتا ہوں ۔ اپنےمفاد کیلئےترامیم کرلیں،دہشتگردی کےخلاف نہیں کی گئیں۔ ازبک دہشت گرد کیسے ملک میں داخل ہو رہے ہیں؟۔ شہادتوں کو چھپانے کا ذمہ دار کون ہے؟ ۔ سپریم کورٹ کہتی ہے حکومت دہشتگردوں کے خلاف ثبوت نہیں لاتی ۔  حکمران استحصالی نظام کو برقرار رکھنا چاہتے ہیں۔   طاہر القادری کا مزید کہنا تھا کہ حکومت اور اور پارلیمنٹ کو مطالبات کی منظوری کیلئے بہت وقت دیا، حکمرانوں نے مذاکرات نہ کرنے کا حتمی فیصلہ کرلیا ہے۔ ثابت ہوگیا ملک میں امن اور حقیقی جمہوریت کیلئے کوئی جگہ نہیں۔ حکمران پہلے دن سے کرپشن پر متفق تھے، ہیں اور رہیں گے، حکمرانوں میں شرم نہیں، مجھ پر الزامات لگانے والے جھوٹے ہیں، جھوٹوں پر اللہ کی لعنت ہے، میں اپنے مقام سے نیچے نہیں اتروں گا۔  اسلام آباد میں شدید بارش کے باوجود دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے طاہر القادری نے کہا کہ آج دھرنے کا آخری دن ہے، کل دھرنا نہیں ہوگا، حکمرانوں کو کئی دن کی مہلت دی، آخری بار اصلاحات کیلئے 3 بجے تک کی مہلت دیتا ہوں، اس کے بعد اپنے اگلے اقدام کا اعلان کریں گے، میں مذاکرات کا آخری موقع دے رہا ہوں، آج شام سے پہلے معرکے کو ختم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ لوگ مذاکرات پر یقین نہیں رکھتے، انتخابی عمل پیسے پر ہے، حکمران جمہوری مزاج نہیں رکھتے، بارش لوگوں کے جذبے کم نہ کر سکی، بارش اللہ کی رحمت بن کر آئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کیلیے پْرامن سیاسی مذاکرات کی کوئی اہمیت نہیں، حکمرانوں کے رویئے سے ثابت ہوگیا کہ ملک میں امن اور حقیقی جمہوریت کیلئے کوئی گنجائش نہیں۔

یہ بھی پڑھیں  ورلڈ ہاکی لیگ: برطانیہ نے پاکستان کو شکست دیکر اولمپک 2016ءکیلئے کوالیفائی کر لیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker