بین الاقوامیتازہ ترین

چین میں دنیا کا سب سے طویل شیشے کا پل عوام کے لیے کھول دیا گیا

بیجنگ(ڈیسک نیوز) چین نے شیشے کے فرش والے دنیا کے سب سے بڑے پل کو سیاحوں کے لیے کھول دیا لیکن ساتھ ہی شہریوں کو خبردار کیا ہے کہ بلندی سے خوف کھانے والے اس پل کا رخ نہ کریں۔معلق پل کی کل لمبائی 430 میٹر اور یہ زمین سے 300 میٹر کی بلندی پرواقع ہے۔ یہ صوبہ ہونان میں واقع زینگ جیاجے پہاڑیوں پر تعمیر کیا گیا جہاں مشہور فلم ’ اواتار‘ کی شوٹنگ کی گئی تھی۔اس پل کی راہداری چھ میٹر چوڑی ہے جس میں شفاف شیشے کے 99 پینل لگائے گئے ہیں جو ایک وقت میں 800 افراد کا وزن برداشت کرسکتے ہیں۔ اس کا ڈیزائن اسرائیلی آرکیٹکٹ ہائم نے تیار کیا ہے۔اب سیاح اور شوقین حضرات اس پل پر گھوم پھر سکتے ہیں اور اس میں بنجی جمپ کا اضافہ بھی کیا جائے گا۔ پل کے افتتاح کے موقع پر یہاں آنے والے افراد بڑے پراعتماد اورخوش دکھائی دیئے تاہم بعض نے فرش کے آرپار زمین دیکھ کر کچھ خوف بھی محسوس کیا۔اس سے قبل 2015 میں شمالی ہینان میں یونتائی پہاڑیوں پر بھی شیشے کا ایک فرش بنایا گیا تھا جس میں اب دراڑیں آچکی ہیں، اسی بنا پر نئے پل کو زیادہ مضبوط اور محفوظ بنایا گیا ہے تاکہ لوگ بے خوف ہوکر یہاں پر آسکیں، اس کے لیے لوہے کا ایک ہتھوڑا بھی شیشے پر مار کر اسے توڑنے کی ناکام کوشش کی گئی اور اس کے علاوہ پل پر ایک کار بھی دوڑائی گئی جس سے اس کی مضبوطی کو ثابت کیا گیا۔ایک دن میں صرف 800 افراد کو اس پل پر آنے کی اجازت دی جاتی ہے جب کہ ٹکٹ صرف دو ہزار پاکستانی روپے کے برابر ہے لیکن یہاں تفریح کے لئے آنے والوں کو ایڈوانس بکنگ کرانی پڑتی ہے جب کہ پُل پر خواتین کے ہیل پہن کر چلنے پر بھی پابندی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  پھولنگر:ملالہ کودخترپاکستان کاخطاب دینے پراظہارافسوس، رہنماء رانابلنداختر

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker