تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:بااثرفیکٹری مالکان نے عدالتی حکم امتناعی کے باوجود زہریلا پانی بی ایس لنک کینال میں گرانے کیلیے کھدائی شروع کر دی

بھائی پھیرو(نامہ نگار)با اثر فیکٹری مالکان نے عدالتی حکم امتناعی کے باوجود زہریلا پانی بی ایس لنک کینال میں گرانے کیلیے سرائے مغل روڈ پر کھدائی شروع کر دی ۔شہری اور صحافی سراپا احتجاج ،وکلا نے بھی احتجاج کی دھمکی دے دی ،پولیس بھی عدالتی حکم ماننے کی بجائے مل مالکان سے ساز باز ہو گئی کوریج کرنے والے صحافی اور مظلوم دیہاتیوں کے خلاف جھوٹا مقدمہ درج ۔تفصیلات کے مطابق نواحی گاؤں بنگہ بلوچاں میں قائم فارما سیوٹکل کیمیکل فیکٹری نے اپنا زہر آلود پانی بی ایس لنک کینال میں ڈالنے کے لئے پائپ لائن بچھانے کی خاطرکھدائی کر رہی تھی کہ مقامی وکیل محمد اشفاق کھچی نے مفاد عامہ کی خاطر مقامی عدالت سے حکم امتناعی حاصل کر لیااور مقامی اداروں اور مل میں جمع کرادیا،حکم امتناعی کے باوجودگزشتہ روز مل مالکان کے ملازمین نے زہریلے پانی کو نہر میں ڈالنے کیلیے کھدائی شروع کر دی تو نواحی بستی کے کونسلرمحمد ارشاد نے ساتھیوں کے ہمراہ حکم امتناعی مل انتظامیہ اور ٹھیکیدار کو دکھایا نگر مل کے افسر رانا عطاء اللہ اور اسکے ساتھی افسران نے حکم امتاناعی کی کاپی پھاڑ دی اور نہتے دیہاتیوں اور کوریج کرنے والے صحافیوں پر مسلح حملہ کردیا اور کئی دیہاتیوں اورکو شید زخمی کر دیا ۔دیہاتی فریاد لیکر مقامی پولیس چوکی گئے مگر با اثر افراد کے اشاروں پر پولیس نے دروازے بند کر دیے اور شہریوں کی فریاد سننے سے انکار کردیا بلکہ الٹا ایک جھوٹامقدمہ نمبر 409/2016 بجرم 506/379نے پریس کلب سرائے مغل کے نائب صدر رفاقت علی اور چالیس افراد کے خلاف درج کر دیا۔اس پر آج مفت پورہ کے درجنوں دیہاتیوں نے محمد ارشاد کی قیادت میں پریس کلب سرئے مغل کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا اور مل انتظامیہ اور پولیس کے خلاف نعرے بازی کی۔مظاہرین سے خطاب کرتے محمد اشفاق ایڈووکیٹ اور نبیل رفاقت نے کہا کہ وہ عوامی مفاد میں کام کر رہے ہیں کیونکہ فیکٹری کا زہریلا پانی بی ایس لنک کینال میں ڈالنے سے جنوبی پنجاب میں تیرہ اضلاع میں لاکھوں لوگوں کی زندگیوں کو خطرہ پیدا ہو جائے گا ۔۔دریں اثنا پریس کلب سرائے مغل کے صدر کرامت علی وٹو اور پریس کلب بھائی پھیرو کے صدر شیخ خالد رفیق اور پریس کلب مانگا منڈی کے صحافیوں نے جھوٹا مقدمہ درج کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ مقدمہ فوری طور پر خارج کیا جائے ورنہ ضلع بھر کے صحافی سراپا احتجاج بن کر تھانہ سرائے مغل کا گھیراو کریں گے ۔آج پتوکی بار کے وکلا کے ایک وفد جس میں نبیل رفاقت ،اشفاق کھچی ،توقیر صدیق شامل تھے نے پتوکی بار کے عہدیداران سے ملاقات کرکے جھوٹے مقدمہ کے فوری اخراج اور فیکٹری کے زہریلے پانی کو بند کرنے کا مطالبہ کیا،وکلا نے دھمکی دی کہ بصورت دیگر ضلع بھر کے وکلا سرپا احتجاج بن جائی گے۔اس سلسلے میں جب مل انتظامیہ سے موقف لینے کیلیے رابطہ کیا تو انہوں نے موقف دینے سے انکار کر دیا،

یہ بھی پڑھیں  جہانگیر ترین کے سرکاری اجلاسوں کی صدارت کے خلاف حکومت کو نوٹس جاری

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker