پاکستانتازہ ترین

پانامہ لیکس تحقیقات،سپریم کورٹ نے درخواست ابتدائی سماعت کیلئے منظور کرلی

اسلام آباد (بیوروچیف)سپریم کورٹ آف پاکستان نے پاناما لیکس کی تحقیقات کے لئے دائر درخواستوں پر رجسٹرار آفس کے اعتراضات مسترد کرتے ہوئے انہیں ابتدائی سماعت کیلئے منظور کرلیا ہے ،ان درخواستوں کی سماعت اب سپریم کورٹ کا 3 رکنی بینچ کرے گا چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان، امیرجماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق ،ایڈووکیٹ طارق اسد اور وطن پارٹی کی چار درخواستوں کو کھلی عدالت میں سماعت کے لئے مقرر کرنے کا حکم دے دیا۔منگل کو چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے پانامہ لیکس کی تحقیقات کے لئے دائر درخواستوں پررجسٹرار آفس کے اعتراضات کے خلاف اپیلوں کی سماعت اپنے چیمبرمیں کی، کی۔ چیف جسٹس نے فریقین کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد تحریک انصاف سمیت دیگر 4 درخواستوں پر رجسٹرار کی جانب سے لگائے گئے اعتراضات کو ختم کرتے ہوئے درخواستوں کی سماعت کھلی عدالت میں لگانے اور درخواستوں کو سماعت کے لیے مقرر کرنے کا حکم دیا۔ ان درخواستوں کی ابتدائی سماعت 3 رکنی بینچ کرے گاجس میں پہلے یہ فیصلہ ہوگا کہ یہ درخواستیں قابل سماعت ہیں یا نہیںاگر یہ درخواستیں قابل سماعت قرار دے دی گئیں تو پھر درخواستوں میں فریق بنائے گئے اداروں یا افراد کو نوٹس جاری کئے جائیں گے۔واضح رہے کہ پاناما لیکس کی تحقیقات کے لیے آئین کے آرٹیکل 184(3)کے تحت سپریم کورٹ میں4 آئینی درخواستیں دائر کی گئی تھیںجو رجسٹرار آفس سپریم کورٹ نے اعتراضات لگا کر واپس کردی تھیں رجسٹرار آفس نے پانامہ لیکس کی تحقیقات کے لئے دائر درخواستوں پر اعتراض عائد کیا تھا کہ یہ سپریم کورٹ کے دائر کار سے باہر ہیں درخواست گزار متعلقہ فورم سے رجوع کریں،تاہم بعد میں جماعت اسلامی ، تحریک انصاف و دیگر نے درخواست پر رجسٹرار کے اعتراضات کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کردی تھی

یہ بھی پڑھیں  حکومت کا یو ٹرن،ریڈیو پاکستان کی عمارت لیز پر دینے کا فیصلہ واپس

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker